جب اے ٹی ایم نے 100 کی جگہ 500 کے نوٹ دینے شروع کر دیئے!

ناگپور ضلع کے ایک نجی بینک کے اے ٹی ایم میں گڑبڑی آنے کی وجہ سے وہ 100 کی جگہ 500 کے نوٹ باہر نکالنے لگا، اب گڑبڑی دور کر لی گئی ہے۔

بینک اے ٹی ایم، علامتی تصویر
بینک اے ٹی ایم، علامتی تصویر
user

قومی آوازبیورو

ممبئی: بینکوں میں تکنیکی گڑبڑی تو خوب ہوتی رہتی ہیں اور اس سے گاہک کافی پریشان بھی رہتے ہیں لیکن مہاراشٹر کے ناگپور ضلع بینک اے ٹی ایم میں ایسی گڑبڑی آئی کہ جس گاہک کو اس کا احساس ہوا وہ پریشان ہونے کے بجائے خوش ہو گیا۔ دراصل یہاں پر موجود ایک نجی بینک کے اے ٹی ایم نے 100 کی جگہ 500 کے نوٹ خارج کرنا شروع کر دیئے۔

خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کی رپورٹ کے مطابق، جیسے ہی یہ خبر پھیلی کہ بینک کے اے ٹی ایم میں 100 کے نوٹ کی جگہ 500 کے نوٹ باہر آ رہے ہیں، یہاں نقد رقم نکالنے والوں کی قطار لگ گئی۔ بعد میں کسی نے بینک کو جاکر اس کی اطلاع دی، تو کہیں جاکر گڑبڑی کو دور کیا گیا۔


رپورٹ کے مطابق یہ معاملہ ناگپور ضلع کے کھاپرکھیڑا شہر میں پیش آیا۔ یہاں ایک شخص 500 روپے نکلانے کے لئے پہنچا تھا لیکن اے ٹی ایم نے اس کے لئے 500 کے 5 نوٹ یعنی 2500 روپے خارج کر دیئے۔ بدھ کے روز جیسے ہی اس واقعہ کی اطلاع لوگوں کو ملی، بڑی تعداد میں لوگ وہاں رقم نکالنے کے لئے پہنچنے لگے۔

رپورٹ کے مطابق لوگ اس وقت تک اس اے ٹی ایم سے نقدم رقم نکالتے رہے جب تک کسی نے اس کی اطلاع مقامی پولیس کو نہیں دے دی۔ پولیس اطلاع موصول ہونے کے ساتھ ہی موقع پر پہنچی اور اے ٹی ایم کو بند کرایا۔ پولیس عہدیداران نے بعد میں اس کی اطلاع بینک کو دی۔ انہوں نے کہا کہ تکنیکی گڑبڑی کی وجہ سے ایسا ہو رہا تھا۔


رپورٹ کے مطابق بینک ملازم کی ایک غلطی کی وجہ سے ایسا ہوا۔ اس نے رقم ڈالتے وقت 100 روپے والی ٹرے میں 500 کے نوٹ رکھ دیئے۔ اے ٹی ایم 500 کے نوٹ کو 100 کا نوٹ سمجھ رہا تھا، اس لئے 500 روپے نکالنے پر وہ 500 کے 5 نوٹ باہر نکال رہا تھا۔ پولیس عہدیدار کا کہنا ہے کہ اس سلسلہ میں تاحال کوئی معاملہ درج نہیں کیا گیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔