گاڑیوں کا رجسٹریشن فاسٹیگ کے بغیر نہیں ہوگا

حکومت نے گاڑیوں کا رجسٹریشن کرنے یا گاڑی فٹنیس سرٹیفکیٹ جاری کرنے سے پہلے اس کی فاسٹیگ تفصیل لینی لازمی کردی ہے

تصویر پی آئی بی
تصویر پی آئی بی
user

یو این آئی

نئی دہلی: حکومت نے گاڑیوں کا رجسٹریشن کرنے یا گاڑی فٹنیس سرٹیفکیٹ جاری کرنے سے پہلے اس کی فاسٹیگ تفصیل لینی لازمی کردی ہے۔ سڑک ٹرانسپورٹ اور شاہراہوں کی وزارت نے اتوار کو جاری ایک ریلیز میں یہ اطلاع دی اور بتایا کہ نئی گاڑیوں کا رجسٹریشن کرنے یا قومی پرمٹ والی گاڑیوں کے لئے فٹنیس سرٹیفکیٹ جاری کرنے سے پہلے ان کا فاسٹیگ ڈیٹیل لینا ضروری کیا گیا ہے۔ اس پر سختی سے عمل کرنے کے لئے فاسٹیگ نظام کو گاڑی پورٹل سے جوڑ دیا گیا ہے۔

وزارت نے کہا ہے کہ گاڑی - وی اے ایچ اے این پورٹل کے ساتھ قومی الیکٹرانک ٹول کلیکشن - این ای ٹی سی کو جوڑنے کا کام مئی میں پورا ہوگیا تھا اور تب سے گاڑی سسٹم وی آئی این - وی آر این کے ذریعہ سے فاسٹیگ پر سبھی معلومات حاصل کی جا رہی ہیں۔

حکومت کا کہنا ہے کہ ایم اور این زمرے کی گاڑیوں کی فروخت کے وقت نئی گاڑیون میں فاسٹیگ لگانا 2017 میں لازمی کیا گیا تھا لیکن بینک کھاتے کے ساتھ جوڑنے یا انہیں فعال کیے جانے سے لوگ بچ رہے تھے لیکن اب اس کی جانچ کی جائے گی۔

وزارت کا کہنا ہے کہ فاسٹیگ سے جہاں قومی شاہراہ کے استعمال کے وقت ٹول پلازا پر ادائیگی الیکٹرانک ذرائع سے آسان ہوتی ہے، نقد ادائیگی سے بچاجاتا ہے وہیں اس کا استعمال کورونا کے پھیلنے کا خدشہ بھی کم کرنے میں بھی موثر ہوگا۔

next