پرتاپ گڑھ: زہریلی شراب سانحہ کا مطلوب کلیدی ملزم منّا لال یادو گرفتار

ملزم منّا لال یادو نے باز پرس کرنے پر اپنے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے بتایا کہ وہ غیر قانونی شراب گاوں کے ببلو یادو سے خرید کر فروخت کرتا ہے۔ مذکورہ شراب اس نے بابولال پٹیل کو فروخت کی تھی۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

پرتاپ گڑھ: اترپردیش میں پرتاپگڑھ ضلع کے تھانہ سنگرام گڑھ پولیس نے علاقے کے منوہر پور رام پور ڈابی گاوں میں زہریلی شراب سے ہوئی چار اموات کے معاملے کے مطلوب خصوصی ملزم منّا لال یادو کو گرفتار کر غیر قانونی دس پیٹی دیشی شراب و کیمکل برآمد کیا ہے۔

ایس ایچ او آشتوش ترپاٹھی نے بتایا کہ گزشتہ 14 اور 15 /مارچ کو منوہر پور رام پور ڈابی گاوں میں زہریلی شراب پینے سے ایک خاتون سمیت چار افراد کی موت کے معاملے میں منّا لال یادو ساکن مریٹھی تھانہ نواب گنج وغیرہ کے خلاف سنگین دفعات میں کیس درج کیا گیا تھا جس کو علاقے کے وجئے سنگھ انٹر کالج کے نزدیک منگل کو گرفتار کر کے اس کے گھر سے غیر قانونی دس پیٹی دیشی شراب و او پی کیمکل برآمد کیا گیا ہے۔


ملزم منّا لال یادو نے باز پرس کرنے پر اپنے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے بتایا کہ وہ غیر قانونی شراب گاوں کے ببلو یادو سے خرید کر فروخت کرتا ہے۔ مذکورہ شراب اس نے بابولال پٹیل کو فروخت کی تھی، جس کے پینے سے کچھ لوگوں کی موت ہوگئی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔