یونیورسٹی امتحانات: یوپی حکومت 2 جولائی کو کرے گی حتمی فیصلہ

ڈاکٹر شرما نے کہا کہ یکم جولائی کو یو جی سی کی جانب سے رہنما ہدایات جاری کیے جانے کے بعد حکومت اس ضمن میں 2 جولائی کو حتمی فیصلے کا اعلان کرے گی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

لکھنؤ: ایک اعلی سطحی کمیٹی کی جانب سے اس سال یونیورسٹی امتحانات نہ کرانے کی سفارش کے باجود اترپردیش حکومت اس ضمن میں 2 جولائی کو حتمی فیصلہ لے گی۔ ریاستی حکومت کی جانب سے تشکیل شدہ 4 رکنی کمیٹی نے کورونا وائرس کی وجہ سے امتحانات نہ کرانے کی تجویز پیش کی ہے۔کمیٹی نے اپنی رپورٹ پیر کی رات حکومت کو سونپ دی ہے۔ اتر پردیش کے نائب وزیر اعلی و وزیر تعلیمات ڈاکٹر دنیش شرما نے منگل کو کہا کہ اس ضمن میں حتمی فیصلہ 2 جولائی کو کیا جائے گا۔

ڈاکٹر شرما نے کہا کہ یکم جولائی کو یو جی سی کی جانب سے رہنما ہدایات جاری کیے جانے کے بعد حکومت اس ضمن میں 2 جولائی کو حتمی فیصلے کا اعلان کرے گی۔ ذرائع نے بتایا کہ میرٹھ یونیورسٹی کے وائس چانسلر اے کے تنیجا کی سربراہی میں تشکیل دی گئی چار رکنی کمیٹی اپنی رپورٹ میں امتحانات کو منسوخ کرنے کی سفارش کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وبا کی وجہ سے یہ ممکن نہیں ہے۔ کمیٹی میں تین دیگرا راکین دوسری یونیورسٹیز کے وائس چانسلر ہیں۔

اگر حکومت کمیٹی کی سفارش کو قبول کرلیتی ہے تو تقریباً 48 لاکھ طلبہ ایک متعینہ فارمولے کے مطابق پرموٹ کر دیئے جائیں گے۔ متعدد یونیورسٹیز میں نیشنل لاک ڈاؤن سے عین قبل امتحانات شروع ہوگئے تھے لیکن 25 مارچ کو لاک ڈاؤن کے اعلان کے بعد امتحان ملتوی کردیئے گئے تھے۔ ان لاک۔1 کے بعد کچھ یونیورسٹیز نے امتحانات کی نئی تاریخوں کا اعلان کیا تھا۔ لیکن اس فیصلے کی طلبہ و اساتذہ دونوں نے سخت مخالفت کی تھی جس کے بعد حکومت ہفتہ کو چار رکنی کمیٹی تشکیل دے کر اس ضمن میں اپنی تجویز پیش کرنے کو کہا تھا کہ آیا امتحانات منعقد کرانا ممکن ہوگا یا نہیں۔