تری پورہ تشدد: سپریم کورٹ منگل کو ترنمول کانگریس کی عرضی پر سماعت کے لیے راضی

درخواست گزار ترنمول کانگریس نے جسٹس چندرچوڑ کی سربراہی والی بنچ کے سامنے ’خصوصی تذکرہ‘ کے تحت معاملے کی جلد سماعت کرنے پر زور دیا تھا۔

سپریم کورٹ، تصویر یو این آئی
سپریم کورٹ، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے پیر کو کہا کہ وہ آل انڈیا ترنمول کانگریس کی توہین عدالت کی عرضی پر منگل کو سماعت کرے گی۔ ترنمول کانگریس نے تری پورہ میں اپنے کارکنوں کو تشدد سے بچانے اور ریاستی حکومت کو مناسب سیکورٹی فراہم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ایک عرضی دائر کی ہے۔ پارٹی نے ریاستی پولیس کے سینئر افسران پر امن و امان برقرار رکھنے میں ناکام رہنے کا الزام لگایا ہے۔

درخواست گزار ترنمول کانگریس نے جسٹس چندرچوڑ کی سربراہی والی بنچ کے سامنے ’خصوصی تذکرہ‘ کے تحت معاملے کی جلد سماعت کرنے پر زور دیا تھا۔ عرضی گزار کا الزام ہے کہ تری پورہ میں بلدیاتی اداروں کے انتخابات 25 نومبر کو ہونے ہیں۔ اس حوالے سے مہم چلانے والے کارکنوں کو سیاسی وجوہات کی بنا پر تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور انہیں جھوٹے مقدمات میں پھنسایا جا رہا ہے۔


جسٹس چندر چوڑ نے کہا کہ بنچ 25 نومبر کو اس معاملے کی سماعت کرے گی، لیکن درخواست گزار کے وکیل نے پھر استدعا کی کہ انتخابات 25 نومبر کو ہیں اور ریاست میں تشدد کی صورتحال دن بدن سنگین ہوتی جا رہی ہے۔ 25 نومبر سے پہلے اس معاملے کی سماعت کی جائے۔ اس کے بعد سپریم کورٹ نے درخواست گزار کی درخواست پر دوبارہ غور کرتے ہوئے اسے منگل کو سماعت کے لیے لسٹ کرنے کی ہدایت کی۔

عرضی میں حالیہ کیس کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ اتوار کو تری پورہ پولیس نے اداکار اور ترنمول کانگریس لیڈر سیانی گھوش کے خلاف جھوٹا مقدمہ درج کیا تھا، ترنمول کانگریس لیڈر پر دو برادریوں کے درمیان نفرت پھیلانے کی مہم چلانے اور قتل کا الزام لگاتے ہوئے ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔