شمالی کشمیر کے سوپور میں لشکر کے تین اعانت کار گرفتار: پولیس کا دعویٰ

پولیس ترجمان نے کہا کہ ناکہ پر ان تینوں افراد کو جب رکنے کا اشارہ کیا گیا تو انہوں نے جائے موقع سے فرار ہونے کی کوشش کی۔ ان کا کہنا تھا لیکن سیکورٹی فورسز نے مستعدی کا مظاہرہ کرکے تینوں کو دھر لیا۔

گرفتار، علامتی تصویر یو این آئی
گرفتار، علامتی تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

سری نگر: پولیس نے شمالی کشمیر کے قصبہ سوپور میں لشکر طیبہ نامی ملی ٹنٹ تنظیم سے وابستہ تین اعانت کاروں کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ ایک پولیس ترجمان نے اپنے ایک بیان میں تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا کہ زینہ گیرسوپور میں درد پورہ کراسنگ پر 11 جنوری کو ایک ناکہ چیکنگ کے دوران سیکورٹی فورسز نے دیکھا کہ تین افراد گنڈ براٹھ گاؤں سے بومئی گاؤں کی طرف مشکوک حالات میں گھوم پھر رہے ہیں۔

پولیس ترجمان نے کہا کہ ناکہ پر ان تینوں افراد کو جب رکنے کا اشارہ کیا گیا تو انہوں نے جائے موقع سے فرار ہونے کی کوشش کی۔ ان کا کہنا تھا لیکن سیکورٹی فورسز نے مستعدی کا مظاہرہ کرکے تینوں کو دھر لیا۔ موصوف ترجمان نے گرفتار شدگان کی شناخت عرفات مجید ڈار ولد عبدالمجید ڈار ساکن سوپور، توصیف احمد ڈار ولد مرحوم غلام حسن ڈار ساکن آرام پورہ سوپور اور مومن نذیر خان ولد نذیر احمد خان ساکن آرام پورہ سوپور کے بطور کی ہے۔


پولیس ترجمان نے کہا کہ ان کی تحویل سے دو پستول، دو پستول میگزین، تیرہ پستول گولیاں اور ایک گرینیڈ بر آمد کیا گیا۔ بیان میں کہا گیا کہ ابتدائی تحقیقات سے منکشف ہوا کہ گرفتار شدگان لشکر طیبہ نامی ملی ٹنٹ تنظیم کے اعانت کار تھے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔