اوریا میں حادثہ نہیں قتل عام ہوا، استعفی دیں سی ایم یوگی: اجے کمار للو

کانگریس کے ریاستی صدر اجے کمار للو نے دعوی کیا کہ یہ حادثہ نہیں بلکہ مزدوروں کا اجتماعی قتل ہے۔ ریاست کے عوام یوگی حکومت کو معاف نہیں کریں گے۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

لکھنؤ: اتر پردیش کے ضلع اوریا میں خوفناک سڑک حادثے میں 24 مہاجر مزدوروں کی موت کو اجتماعی قتل قرار دیتے ہوئے کانگریس کے ریاستی صدر اجے کمار للو نے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ سے استعفی کا مطالبہ کیا ہے۔ للو نے دعوی کیا کہ’یہ حادثہ نہیں بلکہ مزدوروں کا اجتماعی قتل ہے۔ ریاست کے عوام یوگی حکومت کو معاف نہیں کریں گے۔ انہوں نے حکومت سے مہلوکین کے اہل خانہ کو 20۔20 لاکھ روپئے اور زخمیوں کو 5۔5 لاکھ روپئے مالی تعاون کے طور پر دینے کا مطالبہ کیا۔

کانگریس ریاستی صدر نے کہا کہ اب تک ریاستی حکومت کے مزدوروں کے تئیں سوتیلے رویہ کی وجہ سے مہاجر مزدور سڑک حادثات کا شکار ہو رہے ہیں۔ پیدل، سائیکلوں پر سوار ہوکر، ٹرک، میٹاڈور اور ٹیمپو سے آرہے مزدور ہر روز سڑک حادثات میں ہلاک ہو رہے ہیں۔

اس سے قبل گورکھپور، لکھنؤ، بہرائچ، بارہ بنکی، اناؤ، مظفر نگر، جالون، چترکوٹ سمیت کئی اضلاع میں سڑک حادثے میں مزدور مارے گئے ہیں۔ ہزاروں بسوں کے باوجود مزدور پیدل چل رہے ہیں۔ یہ غیر انسانی اور شرمناک ہے۔

للو نے کہا کہ وزیر اعلی ہیڈلائن منیجمنٹ کرنا بند کریں۔ انہوں نے پولیس انتظامیہ اور اضلاع کے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کو حکم دیا تھا کہ مہاجر مزدوروں پیدل نہ چلیں بلکہ ان کے لئے بس اور ریلوے کا انتظام کیا جائے اس حکم کا کیا ہوا۔

Published: 16 May 2020, 9:11 PM
next