نئے پلانٹ سے ہر ماہ ایک کروڑ ویکسین ہوگی تیار

منسکھ مانڈاویہ نے کہا کہ حکومت ہر شہری کے لیے ویکسین تک یکساں رسائی کو یقینی بنانا چاہتی ہے۔ کوویکسین کی پیداوار کی سہولت کی توسیع سے اس ہدف کو حاصل کرنے میں مزید مدد ملے گی۔

تصویر ٹوئٹر @mansukhmandviya
تصویر ٹوئٹر @mansukhmandviya
user

یو این آئی

انکلیشور: مرکزی وزیر صحت منسکھ مانڈاویہ نے آج اپنی آبائی ریاست گجرات انکلیشور میں بھارت بائیوٹیک کے نئے پلانٹ سے اینٹی کورونا مقامی ویکسین کوویکسین کی پہلی تجارتی کھیپ کے نکلنے کے موقع پر کہا کہ ملک کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے پر توجہ مرکوز کئے ہوئے ہے اور اس کی کنجی تیز اور موثر ویکسی نیشن ہی ہے۔

منسکھ مانڈاویہ نے کہا کہ حکومت ہر شہری کے لیے ویکسین تک یکساں رسائی کو یقینی بنانا چاہتی ہے۔ کوویکسین کی پیداوار کی سہولت کی توسیع سے اس ہدف کو حاصل کرنے میں مزید مدد ملے گی۔ نئے پلانٹ میں ویکسین کی تیاری سے ملک میں اس کی پیداوار میں اضافہ ہوگا۔ اس سے ہر ماہ ایک کروڑ ویکسین تیار ہوگی۔ منسکھ مانڈاویہ نے کہا کہ کورونا کے علاج کے لیے مناسب آکسیجن اور دیگر سہولیات کا انتظام کیا گیا ہے۔


واضح رہے کہ حیدرآباد میں قائم بھارت بائیوٹیک نے اپنی ویکسین کی پیداواری صلاحیت کو بڑھاکر سالانہ ایک ارب تک پہنچنے کے مقصد سے بھروچ ضلع کے انکلیشور میں نئے پلانٹ میں پروڈکشن شروع کیا ہے۔ یہ ستمبر سے استعمال کے لیے دستیاب ہوگی۔

کوویکسین کی پہلی تجارتی کھیپ کے نکلنے کے موقع پر کمپنی کے چیئرمین کم منیجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹر کرشن ایلا بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی کمپنی ملک اور دنیا بھر میں لوگوں کو ویکسین کی مانگ کے مطابق مکمل فراہمی کو یقینی بنانا چاہتی ہے۔ حفاظت اور افادیت کے لحاظ سے عالمی معیار کی ویکسین کا ہدف حاصل کرنے کے بعد کمپنی اب سالانہ ایک ارب ویکسین تیار کرنے کی صلاحیت کی طرف بڑھ رہی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔