راجیہ سبھا میں پیش نہیں ہوا طلاق ثلاثہ بل، اپوزیشن اتحاد سے ہاری حکومت

طلاق ثلاثہ بل پیش نہیں ہو سکا: چیئرمین راجیہ سبھا

راجیہ سبھا کے چیئرمین نے ایوان کو مطلع کیا کہ اس اجلاس کے دوران طلاق ثلاثہ بل پیش نہیں ہوگا کیوں کہ تمام جماعتوں کی اس پر عام رائے نہیں بن سکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بل پیش ہونا تھا لیکن اب نہیں ہوگا۔ چیئرمین نے ارکان پارلیمنٹ سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ آج مانسون اجلاس کا آخری دن ہے اور آپ لوگ ایوان کو چلانے میں تعاون دیں۔

حزب اختلاف کے اتحاد کے سامنے حکومت نے گھٹنے ٹیکے

پارلیمنٹ کے مانسوس اجلاس کے آخری دن کانگریس اور بی جے پی میں آر پار کی جنگ دیکھنے کو ملی۔ حکومت کی طرف سے ترمیم شدہ طلاق ثلاثہ بل پیش کرنے کی کوشش کی گئی لیکن حزب احتلاف کے اتحاد نے حکومت کو ایسا کرنے سے ناکام کر دیا۔ آخر کار حزب اقتدار کو ہار ماننی پڑی اور طلاق ثلاثہ پر مبنی بل پیش نہیں کیا جا سکا۔ اس بل کو منظور کرانے کے لئے اب حکوت کو اگلے اجلاس کا انتظار کرنا ہوا۔

جمعہ کو پارلیمنٹ کی کارروائی کا آغاز ہونے پر کانگریس نے رافیل سودے کا معاملہ اٹھایا اور زبردست ہنگامہ کیا۔ اس کے بعد اپوزیشن جماعتوں نے طلاق ثلاثہ پر مبنی بل کو پیش کئے جانے کی مخالفت کی۔ ہنگامہ کے چلتے راجیہ سبھا کی کارروائی کو 2.30 بجے تک ملتوی کر دینی پڑی۔ بعد میں کارروائی کا ازسر نو آغاز ہوا۔

جمعرات کو ہی مودی کابینہ نے اس بل میں ترامیم کی تھیں، جس کے بعد حکومت کو امید تھی اب بل منظور ہو جائے گا۔ واضح رہے کہ اس بل میں تمام طرح کی خامیاں تھیں جس کی وجہ سے کانگریس سمیت اپوزیشن کا اس پر سخت اعتراض تھا۔ جمعہ کے روز یو پی اے کی چیئر پرسن سونیا گاندھی نے میڈیا سے یہ کہا تھا کہ ان کا موقف وہی ہے جو پہلے تھا اور اس میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے۔ جمعہ کے روز حکومت کی جانب سے راجیہ سبھا میں ترمیم شدہ بل کی کاپیاں بھی بانٹی گئی۔ لیکن حکومت کی ایک نہ چلی، بل پیش نہیں ہو سکا اور حکومت کو اسے منظور کرانے کے لئے اب گلے اجلاس کا انتظار کرنا ہوگا۔

اپوزیشن کی طرف سے طلاق ثلاثہ بل کی مخالفت

تین طلاق بل کو لے کر ٹی ایم سی کے رکن پارلیمنٹ ڈیریک او برائن نے کہا کہ جمعہ کو پرائیویٹ بلوں پر بحث ہوتی ہے ایسے میں حکومت طلاق ثلاثہ پر مبنی بل کیسے لا سکتی ہے! علاوہ ازیں آنند شرما اور رام گوپال یادو نے بھی بل کی مخالفت کی۔

پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کا آج آخری دن ہے، آج راجیہ سبھا میں تین طلاق پر مبنی بل کو پیش کیا جاتا ہے اور اس کے حوالہ سے سیاسی سرگرمیاں تیز ہو گئی ہیں۔ حکومت جہاں اس بل کو منظور کرا لینے کے لئے پُر امید ہے وہیں حزب اختلاف نے ابھی اپنے پتے نہیں کھولے ہیں۔ دریں اثنا یو پی اے کی چیئر پرسن سونیا گاندھی نے اس پار ردعمل ظاہر کیا ہے۔

سونیا گاندھی سے جب طلاق ثلاثہ بل سے متعلق سوال پوچھا گیا تو انہوں نے صرف اتنا کہا کہ ’’اس ایشو پر ہمارا رُخ صاف ہے۔‘‘

قبل ازیں ایوان کی کارروائی شروع ہونے سے قبل پارلیمنٹ میں بی جے ارکان پارلیمنٹ نے طلاق ثلاثہ بل کے حوالہ سے میٹنگ کی۔ میٹنگ کے دوران بی جے پی کے صدر امت شاہ، راج ناتھ سنگھ اور مختار عباس نقوی شامل رہے۔ حزب اقتدار ہر قیمت پر اس بل کو منظور کرانے کی کوشش کر رہا ہے۔

وہیں، مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے امید ظاہر کی ہے کہ طلاق ثلاثہ بل کو راجیہ سبھا سے منظور کرانے میں حکومت کو تمام جماعتوں کی حمایت حاصل ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ مختلف پارٹیاں اپنے سیاسی ’مفاد‘ سے بالاتر ہو کر اس میں تعاون دیں گے۔

سب سے زیادہ مقبول