کانگریس کے چنتن شیویر میں اٹھایا گیا ای وی ایم کا مسئلہ، کُل جماعتی اجلاس میں ہوگا فیصلہ

اجلاس کے دوران ای وی ایم کی مخالفت کرنے والے کئی لیڈر تھے اور ان میں سے ایک سابق مرکزی وزیر کپل سبل بھی ای سی ایم کی سخت مخالفت کی۔

تصویر آئی این سی
تصویر آئی این سی
user

قومی آوازبیورو

اُدے پور: کانگریس پارٹی کے سہ روزہ 'چنتن شیویر' کے دوران بیلٹ پیپر پر انتخابات کے مطالبہ کی تجویز پیش کی گئی، لیکن ذیلی گروپ نے اسے ٹھکرا دیا اور کہا کہ یہ تمام جماعتوں کی تشویش ہے اور اس کا فیصلہ آل پارٹی میٹنگ میں کیا جائے گا۔ تجویز یہ تھی کہ کانگریس پارٹی کو اس مسئلہ پر قرارداد لانی چاہئے، لیکن پارٹی نے کہا کہ یہ کیمپ پارٹی کی اندرونی بحث اور مستقبل کے ایجنڈے کے لیے ہے۔

اجلاس کے دوران ای وی ایم کی مخالفت کرنے والے کئی لیڈر تھے اور ان میں سے ایک سابق مرکزی وزیر کپل سبل بھی ای سی ایم کی سخت مخالفت کی۔ میٹنگ میں بتایا گیا کہ کئی سیاسی جماعتوں نے انتخابات میں اپنی شکست کے لیے ای وی ایم کو مورد الزام ٹھہرایا ہے لیکن جاری کیمپ میں پارٹی اپنے مستقبل کے پروگراموں کے لیے ایک جامع روڈ میپ تیار کر رہی ہے۔


کانگریس لیڈر راہل گاندھی کے اس سال 15 اگست سے کشمیر سے کنیا کماری تک عوام سے رابطہ قائم کرنے کے لیے ’پد یاترا‘ (پیدل سفر) شروع کرنے کا امکان ہے۔ یہ یاترا پارٹی کے 'چنتن شیویر' کے دوران بحث کا حصہ رہی۔

اسی طرح کی 'پد یاترا' ہر ریاست میں ریاستی رہنماؤں کے ذریعے منعقد کی جائیں گی تاکہ عوام کے حق میں ایجنڈے کو آگے بڑھایا جا سکے اور حکومت کی 'ناکامیوں' اور لوگوں کی حالت زار کو اجاگر کیا جا سکے۔ حتمی فیصلہ سی ڈبلیو سی کرے گی، حالانکہ پارٹی صدر سونیا گاندھی نے مہنگائی اور معاشی مسائل پر حکومت کے خلاف عوامی تحریک کے پروگرام پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔