اردو زبان و ادب کا مستقبل ہندوستان ہی نہیں، دنیا بھر میں تابناک اور روشن: ڈاکٹر عقیل احمد

این سی پی یو ایل کے ڈائریکٹر ڈاکٹر عقیل احمد نے کہا کہ موجودہ حکومت پر اردو ختم کرنے کا الزام سراسر بے بنیاد ہے اور اردو زبان و ادب کا مستقبل نہ صرف ہندوستان میں بلکہ دنیا بھر میں تابناک اور روشن ہے

ڈاکٹر عقیل احمد، تصویر یو این آئی
ڈاکٹر عقیل احمد، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

سری نگر: قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان (این سی پی یو ایل) کے ڈائریکٹر ڈاکٹر عقیل احمد نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ موجودہ حکومت پر اردو ختم کرنے کا الزام سراسر بے بنیاد ہے اور اردو زبان و ادب کا مستقبل نہ صرف ہندوستان میں بلکہ دنیا بھر میں تابناک اور روشن ہے۔ ڈاکٹر عقیل احمد نے ان خیالات کا اظہار یو این آئی اردو کے ساتھ ایک انٹرویو کے دوران کیا۔

عقیل احمد نے کہا کہ ’موجودہ نریندر مودی صاحب کی سرکار اردو زبان و ادب کے فروغ کے لئے انتہائی سنجیدہ ہے جس کا ثبوت یہ ہے کہ اس سرکار نے این سی پی یو ایل کے بجٹ میں 150 سو فیصد اضافہ کیا ہے‘۔ ان کا کہنا تھا کہ ’جو باتیں ہو رہی ہیں کہ موجودہ سرکار اردو ختم کرنا چاہتی ہے وہ صرف ایک پروپیگنڈا ہے جس کی کوئی بنیاد ہی نہیں ہے‘۔


ڈاکٹر عقیل احمد نے اردو کے مستقبل کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ اردو زبان کا مستقبل نہ صرف ہندوستان میں بلکہ پورے دنیا میں تابناک اور روشن ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’اردو کا مستقبل روشن ہے ہم پچاس برسوں سے سنتے آ رہے ہیں کہ اردو ختم ہو رہی ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ اس کی مقبولیت میں دن بہ دن اضافہ ہو رہا ہے ملک کی شاید ہی کوئی ریاست ہوگی جہاں اردو بولنے اور پڑھنے والے نہ ملیں گے‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’اردو دنیا کے باقی ملکوں جیسے امریکہ، کنیڈا۔ روس، چین، برطانیہ، جرمنی وغیرہ میں بھی پھیل رہی ہے اور مشرق وسطیٰ کے ممالک میں بھی اردو کی نئی بستیاں آباد ہو رہی ہیں‘۔ انہوں نے کہا کہ اردو انگریزی کی طرح دنیا میں رابطے کی زبان بننے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ موصوف ڈائریکٹر نے کہا کہ این سی پی یو ایل سال میں بچوں کے لئے دو سے تین سو کتابیں شائع کرنے کے علاوہ ہر سال چالیس سے پچاس نئی ادبی کتابیں بھی شائع کرتا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔