اپوزیشن اتحاد کی کوششوں میں تیجسوی کا رول سی ایم نتیش کی طرح اہم ہے: آر جے ڈی

لالو یادو کی صحت ٹھیک نہیں ہے، اس لیے ان کے بیٹے تیجسوی سی ایم نتیش کمار کے ساتھ مل کر اپوزیشن جماعتوں کو متحد کرنے کے لیے کام کر رہے ہیں۔

<div class="paragraphs"><p>تیجسوی یادو اور نتیش کمار، تصویر آئی اے این ایس</p></div>

تیجسوی یادو اور نتیش کمار، تصویر آئی اے این ایس

user

قومی آوازبیورو

پٹنہ: بہار کے سی ایم نتیش کمار ملک میں اپوزیشن اتحاد کی قیادت کر رہے ہیں، ایسے میں ڈپٹی سی ایم تیجسوی یادو کا کردار بھی کم اہم نہیں ہے۔ بہار میں عظیم اتحاد کی حکومت بننے کے بعد سی ایم نتیش کمار نے پہلی بار سونیا گاندھی اور ان کے بیٹے راہل گاندھی سے ملاقات کی۔

وہیں، سابق سی ایم لالو پرساد یادو، جو برسوں سے کانگریس کے قابل اعتماد اتحادی ہیں، نے گزشتہ سال ستمبر میں سونیا گاندھی اور راہل گاندھی سے ملاقات کی پہل کی تھی۔ ڈپٹی سی ایم تیجسوی یادو و سی ایم نتیش کمار کے ساتھ اپوزیشن لیڈروں سے مسلسل میٹنگیں کر رہے ہیں۔ آر جے ڈی کے قومی ترجمان مرتیونجے تیواری نے کہا کہ سابق سی ایم لالو پرساد کو بی جے پی-آر ایس ایس کا سب سے بڑا مخالف لیڈر مانا جاتا ہے۔ لالو پرساد ہمیشہ ملک میں غیر بی جے پی حکومت کی وکالت کرتے ہیں۔


فی الحال لالو یادو کی صحت ٹھیک نہیں ہے، اس لیے ان کے بیٹے تیجسوی سی ایم نتیش کمار کے ساتھ مل کر اپوزیشن جماعتوں کو متحد کرنے کے لیے کام کر رہے ہیں۔ نتیش اور تیجسوی کی جوڑی نے بہار سے بی جے پی کو ہٹا دیا ہے۔ یہ جوڑی اب مرکز میں نریندر مودی حکومت کو ہٹانے کے لیے اپوزیشن جماعتوں کو متحد کرنے میں مصروف ہے۔ مرتیونجے تیواری نے کہا کہ ہمارا مقصد نریندر مودی کی عوام دشمن حکومت کو روکنا ہے۔ بی جے پی حکومت نے ملک کے عوام کے لیے کچھ نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ جس طرح سے مرکزی حکومت آئینی اداروں کا استعمال کرتے ہوئے اپوزیشن جماعتوں کے لیڈروں کو نشانہ بنا رہی ہے، یہ ملک میں جمہوریت کے لیے خطرہ ہے۔ تیواری نے کہا، کوئی نہیں جانتا کہ اگر نریندر مودی 2024 کے لوک سبھا انتخابات کے بعد بھی اپنے عہدے پر برقرار رہتے ہیں تو کیا ہوگا۔ یہ بھی ممکن ہے کہ بی جے پی حکومت آئین میں تبدیلی کر دے۔ مرکزی حکومت کی طرف سے سی بی آئی، ای ڈی اور محکمہ انکم ٹیکس کے ذریعے اپوزیشن جماعتوں کے لیڈروں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ انہوں نے سوال کیا کہ بی جے پی لیڈروں پر چھاپے کیوں نہیں مارے جا رہے ہیں۔


تیواری نے کہا کہ بی ایس یدی یورپا، ہمنتا بسوا جیسے بی جے پی لیڈروں کے خلاف بدعنوانی کے مقدمات ہیں۔ لیکن سی بی آئی، ای ڈی یا محکمہ انکم ٹیکس ان پر چھاپہ نہیں مارے گا۔ یہ واضح ہے کہ مرکزی حکومت ملک کی اپوزیشن جماعتوں اور لیڈروں کو تباہ کرنا چاہتی ہے۔ ہمیں اپنے دفاع کا حق حاصل ہے۔ ملک میں اپنی اور جمہوریت کو بچانے کا بہترین طریقہ بی جے پی کو اقتدار سے ہٹانا ہے۔ سی ایم نتیش کمار اور تیجسوی یادو اچھا کام کر رہے ہیں۔

تیواری نے مزید کہا کہ جہاں تک تیجسوی یادو کے سیاسی عزائم کا تعلق ہے تو انہوں نے خود بہار اسمبلی میں کہا تھا کہ نہ تو انہیں بہار کا وزیر اعلیٰ بننے کی کوئی خواہش ہے اور نہ ہی نتیش کمار کی وزیر اعظم بننے کی کوئی خواہش ہے۔ وہ صرف اپوزیشن جماعتوں کو بی جے پی کے خلاف اکٹھا کر رہے ہیں۔ دوسری طرف تیج پرتاپ یادو نے کہا کہ تیج-تیجسوی کی جوڑی نے بہار میں بی جے پی کو روک دیا ہے۔ اب لالو پرساد یادو، نتیش کمار اور اپوزیشن جماعتوں کے دیگر رہنما مرکز سے نریندر مودی حکومت کو ہٹا دیں گے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔