سونیا گاندھی کا وزیر اعظم مودی کے نام مکتوب ’بلیک فنگس کو محض وبا قرار دے کر قابو نہیں کیا جا سکتا‘

سونیا گاندھی نے اپنے خط میں لکھا کہ مرکزی حکومت کو چاہیے کہ وہ اس سمت میں فوری اقدامات کرے اور ان لوگوں کو راحت فراہم کرے جو بلیک فنگس جیسی بیماری سے متاثر ہیں۔

سونیا گاندھی، صدر کانگریس / Getty Images
سونیا گاندھی، صدر کانگریس / Getty Images
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: کانگریس کی صدر سونیا گاندھی نے وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھ کر بلیک فنگس کے بڑھتے ہوئے قہر پر تشویش کا اظہار کیا اور حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اس کے علاج و معالجے کے مناسب انتظامات کر کے متاثرین کو فوری راحت دی جائے۔

ہفتے کے روز یعنی آج وزیر اعظم مودی کو لکھے گئے خط میں سونیا گاندھی نے کہا کہ مرکزی حکومت نے ریاستوں سے بلیک فنگس کو وبا قرار دینے کو کہا ہے، لیکن اس سے نمٹنے کے لئے اتنے وسائل دستیاب نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وبا قرار دینے کے لئے اس کے علاج کے حوالہ سے تمام ادویات کی تیاری اور دستیابی کو یقینی بنایا جانا چاہیے۔ نیز جن مریضوں کو علاج کی ضرورت ہے انہیں مفت علاج فراہم کیا جانا چاہیے۔


انہوں نے کہا کہ بلیک فنگس کے علاج میں لیپوسومل ایمفوٹیریسن بی سب سے زیادہ ضروری ہے۔ اس کے باوجود اس دوا کی بازار میں بہت قلت ہے، اس کے علاوہ اس وبا کو آج تک آیوشمان بھارت جیسی صحت کی اسکیموں اور دیگر صحت سے متعلق بیمہ اسکیموں سے نہیں جوڑا گیا ہے۔

سونیا گاندھی نے آخر میں لکھا کہ مرکزی حکومت کو چاہیے کہ وہ اس سمت میں فوری اقدامات کرے اور ان لوگوں کو راحت فراہم کرے جو بلیک فنگس جیسی بیماری سے متاثر ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔