بی جے پی کو جھٹکا، سابق رکن اسمبلی شیام سنگھ رانا حامیوں سمیت آئی این ایل ڈی میں شامل

شیام سنگھ رانا نے مرکز کے زرعی قوانین کے خلاف کسانوں کی تحریک کی حمایت کرتے ہوئے گزشتہ 30 ستمبر کو بی جے پی سے استعفیٰ دے دیا تھا۔وہ سال 2007 سے 2020 تک بی جے پی میں رہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

چنڈی گڑھ: ہریانہ میں رادور سے بھارتی جنتا پارٹی(بی جے پی) کے سابق رکن اسمبلی شیام سنگھ رانا اپنے حامیوں سمیت آج پارٹی چھوڑ کر انڈین نیشنل لوک دل(آئی این ایل ڈی)میں شامل ہوگئے۔ شیام سنگھ رانا نے یہاں آئی این ایل ڈی سربراہ اور سابق وزیراعلیٰ اوم پرکاش چوٹالہ، پارٹی جنرل سکریٹری ابھے چوٹالہ، ریاستی صدر نافع سنگھ راٹھی کی موجودگی میں حامیوں سمیت پارٹی کا دامن تھاما۔

اس موقع پر شیام سنگھ نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ وہ اب آئی این ایل ڈی کے ذریعہ رادورکے لوگوں کی زیادہ سے زیادہ خدمت کرنے کہ کوشش کریں گے۔انہوں نے دعویٰ کہا کہ آئی این ایل ہی کسان دوست پارٹی ہے۔انہوں نے مرکزی حکومت کے زرعی اصلاحات قانون کو کسانوں کے مفادات کے منافی بتایا۔

اس سے قبل شیام سنگھ رانا نے مرکز کے زرعی اصلاحات قوانین کے خلاف کسانوں کی تحریک کی حمایت کرتے ہوئے گزشتہ 30ستمبر کو بی جے پی سے استعفیٰ دے دیا تھا۔وہ سال 2007 سے 2020 تک بی جے پی میں رہے۔سال 2009 میں انہوں نے رادور سے بی جے پی کے ٹکٹ پر الیکشن لڑا تھا اور ہارگئے تھے۔لیکن 2014 کے اسمبلی انتخابات میں وہ بی جے پی کے ٹکٹ پر الیکشن میں کامیاب ہوئے اور پارٹی کی حکومت کے چیف پارلیمانی سکریٹری رہے۔سال 2019 کے اسمبلی انتخابات میں پارٹی نے ان کا ٹکٹ کاٹ کر کرن دیو کمبوج کو دے دیا لیکن وہ الیکشن ہار گئے،کمبوج کی ہار کے بعد رانا پر پارٹی میں اندرون خانہ سازش کے الزام بھی لگے۔

next