شیوراج کابینہ میں کھینچ تان جاری، ’قلمدانوں کی تقسیم کے سلسلے میں پھر ورک آؤٹ!‘

شیوراج چوہان کو دہلی سے پیر کی رات میں واپس آنا تھا، لیکن وہ آج صبح گیارہ بجے کے بعد یہاں پہنچے اور اس کے بعد کہا کہ قلمدانوں کی تقسیم کے سلسلے میں آج اور ورک آؤٹ کیا جائے گا۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

بھوپال: مدھیہ پردیش کے وزیراعلی شیوراج سنگھ چوہان نے منگل کے روز کہا کہ وزرا کے درمیان قلمدانوں کی تقسیم کے سلسلے میں وہ آج پھر سے ورک آؤٹ کریں گے۔ شیوراج چوہان نے دہلی سے لوٹنے کے بعد یہاں اسٹیٹ ہینگر پر صحافیوں کے سوالوں کے جواب میں یہ تبصرہ کیا۔ ان سے پوچھا گیا تھا کہ کیا آج شام تک وزرا کے درمیان قلمدانوں کی تقسیم ہو جائے گی؟ اس پر شیوراج سنگھ چوہان نے جواب دیا کہ آج پھر سے ورک آؤٹ کروں گا اور اس کے بعد قلمدان تقسیم کیے جائیں گے۔

شیوراج چوہان اتوار کی صبح دہلی روانہ ہوئے تھے۔ انہوں نے سرکاری سفر کے دوران صدر، نائب صدر اور متعدد مرکزی وزرا سے تحفہ کے علاوہ ریاست کے وزرا کے درمیان محکموں کی تقسیم کے سلسلے میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) کے سینئر لیڈروں سے بات چیت کی ہے۔ شیوراج چوہان کو پیر کی رات میں واپس آنا تھا، لیکن وہ آج صبح گیارہ بجے کے بعد یہاں پہنچے اور اس کے بعد کہا کہ قلمدانوں کی تقسیم کے سلسلے میں آج اور ورک آؤٹ کیا جائے گا۔

چوہان نے دو جولائی کو 28 نئے وزرا کو شامل کر کے کابینہ کی توسیع کی تھی۔ پانچ وزیر پہلے سے ہی ہیں۔ دو جولائی سے ہی وزرا کے درمیاں محکمے کی تقسیم کے سلسلے میں پیش رفت جاری ہے اور اس دن سے سبھی کو محکموں کی تقسیم کا انتظار ہے۔

دراصل تقریباً چار ماہ پہلے کانگریس چھوڑ کر بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) میں آئے جیوترآدتیہ سندھیا کے حامی تقریباً ایک درجن وزیر ہیں۔ مانا جارہا ہے کہ اہم مانے جانے والے محکموں کے سلسلے میں کھینچ تان چل رہی ہے۔ اس لئے چوہان، مرکزی قیادت،ریاستی تنظیم کے علاوہ سندھیا کو بھروسے میں لےکر پھونک پھونک کر قدم رکھ کر آگے بڑھنے کی پالیسی پر چل رہے ہیں۔

Published: 7 Jul 2020, 5:11 PM
next