اکھلیش سے ہری جھنڈی ملنے کا ہنوز انتظار:شیوپال

شیوپال نے بی جےپی حکومت پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومت میں بدعنوانی شباب پر ہے۔ مہنگائی بڑھ گئی ہے۔ لوٹ، قتل، ڈکیتی سے ریاست کانپ رہا ہے۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

پرگتی شیل سماجو ادی پارٹی سربر اہ شیوپال سنگھ یادو نے کہا ہےکہ وہ گزشتہ دوسالوں سے سماج وادی پارٹی(ایس پی) میں انضمام کا انتظار کررہے ہیں لیکن ایس پی سربراہ اکھلیش یادو نے اب تک اس بارے میں کوئی بات نہیں کی ہے۔

سماجی تبدیلی یاترا لے کر بہرائچ پہنچے شیوپال یادو نے میڈیا نمائندوں سے بات چیت میں کہا کہ وہ گزشتہ 2سال سے ایس پی میں پارٹی کے انضمام کا انتظار کررہے ہیں لیکن اکھلیش یادو کے ذریعہ اس پر بات نہیں کی جارہی ہے۔ ایسے میں پارٹی کا انضمام رکا ہوا ہے۔ شیوپال نے کہا کہ بی جےپی کو ہرانے کے لئے ہم سبھی پارٹیوں سے انضمام کو تیار ہیں ۔ اس میں اولین ترجیح اکھلیش یاد و کو دی جائے گی۔ ہماری پارٹی کے کارکنان کو ایس پی میں احترام ملے گا اور ٹکٹ بھی دیا جائےگا۔ ایس پی سے پارٹی کے انضمام کے ساتھ ایک ساتھ مل کر انتخابات بھی لڑ سکتے ہیں ۔ اس کے لئے ایس پی کی جانب سے بھی پہل کرنی ہوگی۔


شیوپال نے بی جےپی حکومت پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومت میں بدعنوانی شباب پر ہے۔ مہنگائی بڑھ گئی ہے۔ لوٹ، قتل، ڈکیتی سے ریاست کانپ رہا ہے۔ پھر بھی بی جےپی حکومت اپنی پیٹھ تھپتھپا رہی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ انہیں وزارت کا کوئی لالچ نہیں ہے۔ ان کے کارکنان کو احترام کے ساتھ اہلیت کے مطابق ٹکٹ دیا جائے اس کے علاوہ انہیں کچھ نہیں چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ سال 2003 میں ایس پی نگراں ملائم سنگھ یادو نے کہا تھا کہ حکومت ہماری نہیں بن پائے گی۔ لیکن انہوں نے اراکین سے رابطہ کیا۔ 203 اراکین ان کے ساتھ آگئے۔ دہلی جاکر ملائم سنگھ سے بات کی پھر ان کی حکومت بن گئی۔اس سے پہلے ضلع کی سرحد میں پہنچے شیوپال کا جگہ جگہ استقبال کیا گیا۔ ماتا مندر میں پوجا ارچنا کی۔ شہر میں واقع سید سالار مستعد غازی کی درگارہ پر پہنچ کر چادر چڑھائی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔