ایوان کو چلانا اپوزیشن کی نہیں حکومت کی ذمہ داری ہے: راہل گاندھی

راہل گاندھی نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ حکومت وزیر مملکت برائے داخلہ اجے مشرا ٹینی کو ہٹائے اور لکھیم پور کھیری معاملے پر ایوان میں بحث کرے، لیکن حکومت اس کی اجازت نہیں دے رہی ہے۔

راہل گاندھی، تصویر یو این آئی
راہل گاندھی، تصویر یو این آئی
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: کانگریس کے سابق صدر و رکن پارلیمنٹ راہل گاندھی نے کہا ہے کہ ایوان چلانا اپوزیشن کی ذمہ داری نہیں ہے، بلکہ یہ حکومت کی ذمہ داری ہے۔ راہل گاندھی نے حکومت کے ذریعہ اپوزیشن پر ایوان کی کارروائی نہ چلنے دینے کے الزام پر انہوں نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں ایوان میں مسائل اٹھانے کی اجازت نہیں دی جا رہی ہے۔

پارلیمنٹ ہاؤس کمپلیکس میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے راہل گاندھی نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ حکومت وزیر مملکت برائے داخلہ اجے مشرا ٹینی کو ہٹائے اور لکھیم پور کھیری معاملے پر ایوان میں بحث کرے، لیکن حکومت اس کی اجازت نہیں دے رہی ہے۔


راہل گاندھی نے کہا کہ ہم لداخ کا مسئلہ اٹھانا چاہتے ہیں لیکن حکومت اسے اٹھانے کی اجازت نہیں دے رہی ہے۔ حکومت کسانوں کے مسئلہ پر بحث کی اجازت نہیں دیتی، راجیہ سبھا کے ممبران پارلیمنٹ کی معطلی پر بات نہیں کرنا چاہتی اور پھر حکومت ہم پر یہ الزام لگاتی ہے کہ ہم ایوان کی کارروائی چلنے نہیں دے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ ایوان کی کارروائی چلائے اور بحث صحیح طریقے سے کرائے۔ فون ٹیپنگ معاملے پر جواب دیتے ہوئے راہل گاندھی نے کہا کہ پیگاسس کیس میں بھی حکومت نے ایوان میں بحث نہیں ہونے دی۔ انہوں نے الزام لگایا کہ جمہوریت پر حملہ ہو رہا ہے اور لگاتارہو رہا ہے، جس کے خلاف ہم لڑ رہے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔