15 سے 18 سال کے بچوں کی کورونا ٹیکہ کاری کے لیے رجسٹریشن یکم جنوری سے

وزیر اعظم نریندر مودی نے کرسمس کے موقع پر ملک سے خطاب کرتے ہوئے اعلان کیا تھا کہ 3 جنوری 2022 سے 15 سے 18 سال کے بچوں کو کورونا ویکسین کی خوراک دینی شروع کر دی جائے گی۔

کورونا ویکسین، تصویر آئی اے این ایس
کورونا ویکسین، تصویر آئی اے این ایس
user

تنویر

وزیر عظم نریندر مودی کے ذریعہ ہندوستان میں 15 سے 18 سال کے بچوں کی کورونا ٹیکہ کاری کو لے کر کیے گئے اعلان کے بعد اس سمت میں تیز پیش رفت دکھائی دے رہی ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے گزشتہ دنوں عوام سے خطاب میں کہا تھا کہ اب 15 سے 18 سال کی عمر کے بچوں کی ٹیکہ کاری کو منظوری دی جا رہی ہے۔ کورونا کے خلاف جاری جنگ میں اس پیش رفت کے بعد اب خبریں سامنے آ رہی ہیں کہ 3 جنوری سے 15 سے 18 سال کے بچوں کے لیے شروع ہونے والی ٹیکہ کاری کا رجسٹریشن یکم جنوری سے شروع ہوگا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بچوں کی کورونا ٹیکہ کاری کے لیے بھی رجسٹریشن کووِن ایپ کے ذریعہ ہوگا۔ نیشنل ہیلتھ اتھارٹی کے چیف ایگزیکٹیو افسر ڈاکٹر آر ایس شرما نے بتایا کہ یکم جنوری سے 15 سے 18 سال کے بچے ویکسین کے لیے اپنا نام رجسٹر کرا سکیں گے۔ بچے جب کووِن ایپ پر رجسٹریشن کرائیں گے تو انھیں سلاٹ فراہم کیا جائے گا۔ کووِن ایپ پر سلاٹ کے دوران بچوں سے ان کا آدھار کارڈ نمبر مانگا جائے گا۔ ممکن ہے کہ بچوں کے لیے الگ سے سنٹر بنایا جائے۔


واضح رہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے کرسمس کے موقع پر ملک سے خطاب کرتے ہوئے اعلان کیا تھا کہ 3 جنوری 2022 سے 15 سے 18 سال کے بچوں کو کورونا ویکسین کی خوراک دینی شروع کر دی جائے گی۔ ذرائع کے مطابق ڈرگ کنٹرولر جنرل آف انڈیا نے بھارت بایوٹیک کی کورونا ویکسین ’کوویکسن‘ کو 15 سے 18 سال تک کے بچوں کے لیے ایمرجنسی استعمال کی منظوری دے دی ہے۔ ساتھ ہی وزیر اعظم مودی نے فرنٹ لائن ورکرس اور 60 سال سے زیادہ عمر کے بزرگوں کے لیے بھی بوسٹر ڈوز یعنی ویکسین کی تیسری خوراک کی منظوری دے دی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔