آر سی پی سنگھ نے اپنے ٹوئٹر بایو سے جنتا دل یو کا نام ہٹایا، پی ایم مودی کی ڈالی تصویر!

مرکزی وزیر اور جنتا دل یو سینئر لیڈر آر سی پی سنگھ نے اپنے ٹوئٹر بایو سے جنتا دل یو کا نام ہٹا دیا ہے، انھوں نے ٹوئٹر پروفائل میں ’آزادی کا امرت مہوتسو‘ پیغام کے ساتھ وزیر اعظم مودی کی تصویر ڈالی ہے

 آر سی پی سنگھ، تصویر آئی اے این ایس
آر سی پی سنگھ، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

بہار سے راجیہ سبھا کے لیے نامزدگی کو لے کر کشمکش کی حالت کے درمیان مرکزی وزیر اور جنتا دل یو کے سینئر لیڈر آر سی پی سنگھ نے بدھ کو بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار کے ساتھ نااتفاقی سے ضروری انکار کیا، لیکن اس درمیان انھوں نے اپنے ٹوئٹر بایو سے جنتا دل یو کا نام ہٹا دیا۔ آر سی پی سنگھ نے ٹوئٹر پروفائل میں ’آزادی کا امرت مہوتسو‘ کے پیغام کے ساتھ وزیر اعظم نریندر مودی کی تصویر ڈالی ہے۔

آر سی پی سنگھ نے آج میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کے اور وزیر اعلیٰ کے درمیان کوئی مسئلہ نہیں ہے اور بدھ کی شام وہ پٹنہ جا رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ’’وزیر اعلیٰ سے کسی ایشو پر کوئی نااتفاقی نہیں ہے۔ راجیہ سبھا کے لیے نامزدگی کی تاریخ 24 سے 31 مئی تک ہے اور آج مرکزی کابینہ کی میٹنگ ہے۔ اس لیے آج شام کو میں پٹنہ جا رہا ہوں۔‘‘ یہ پوچھے جانے پر کہ انھوں نے بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار کے اتفاق کے بغیر مرکزی وزیر کے طور پر حلف لیا، آر سی پی سنگھ نے اسے افواہ بتایا اور کہا کہ انھوں نے وزیر اعلیٰ کی مرضی سے ہی حلف لیا ہے۔


بہرحال، سیاسی گلیاروں میں قیاس آرائیاں ہو رہی ہیں کہ نتیش کمار اور آر سی پی سنگھ کے درمیان رشتے تلخ ہو گئے ہیں۔ انھوں نے گزشتہ سال مرکزی کابینہ میں ہوئے رد و بدل میں جنتا دل یو سے واحد وزیر کی شکل میں حلف لیا تھا۔ اس درمیان سنگھ کے راجیہ سبھا کے لیے نامزدگی کو لے کر پوری طرح سے غیر یقینی کی صورت حال ہے۔ ان کی مدت کار آئندہ مہینے ختم ہو جائے گی۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔