مسجدوں کے لاؤڈاسپیکر ہٹانے پر یوگی حکومت کا شکریہ، کاش مہاراشٹر میں بھی کوئی یوگی ہوتا! راج ٹھاکرے

راج ٹھاکرے نے کہا کہ بدقسمتی سے مہاراشٹر میں کوئی ’یوگی‘ نہیں ہے بلکہ یہاں تو ’بھوگی‘ (برے لوگ) رہتے ہیں۔ راج ٹھاکرے نے کہا، انہوں نے دیوی جگدمبا سے دعا کی ہے کہ مہاراشٹر میں بھی بہتر ماحول بنا رہے۔

راج ٹھاکرے، تصویر آئی اے این ایس
راج ٹھاکرے، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

ممبئی: مہاراشٹر نونرمان سینا (ایم این ایس) کے سربراہ راج ٹھاکرے نے جمعرات کو اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کو ریاست کے تمام مذہبی مقامات بالخصوص مسجدوں سے لاؤڈ اسپیکر ہٹانے پر مبارک باد پیش کی۔ راج ٹھاکرے نے کہا کہ میں مسجدوں سے لاؤڈ اسپیکر ہٹانے کے لئے یوگی حکومت کو تہہ دل سے مبارک باد پیش کرتا ہوں اور میں ان کا مشکور ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ بدقسمتی سے مہاراشٹر میں کوئی ’یوگی‘ نہیں ہے بلکہ یہاں تو ’بھوگی‘ (برے لوگ) رہتے ہیں۔ راج ٹھاکرے نے کہا، انہوں نے دیوی جگدمبا سے دعا کی ہے کہ مہاراشٹر میں بھی بہتر ماحول بنا رہے۔


خیال رہے کہ اس مہینے کی شروعات میں ایم این ایس کے سربراہ نے تمام مسجدوں سے لاؤڈ اسپیکر ہٹانے کے لئے تحریک شروع کی تھی۔ انہوں نے کہا تھا کہ مسجدوں سے لاؤڈ اسپیکر کو ہٹایا جائے، ورنہ ان کے کارکنان ہر مسجد کے سامنے جا کر لاؤڈ اسپیکر کے ذریعے تیز آواز میں ہنومان چالیسہ بجائیں گے۔

ادھر، یوپی میں رضاکارانہ طور پر ریاستی حکومت کے احکامات پر عمل کرتے ہوئے مذہبی مقامات سے لاؤڈ اسپیکر اتارے جا رہے ہیں یا ان کی آواز کم کی جا رہی ہے۔ ایک رپورٹ کے مطابق تمام مذاہب کے لوگ خود مندروں اور مساجد میں نصب اضافی لاؤڈ سپیکر اتار رہے ہیں۔ ساتھ ہی لاؤڈ سپیکر کی آواز معیار کے مطابق کم ہو رہی ہے۔


ایڈیشنل ڈائرکٹر جنرل آف پولیس (نظم و نسق) پرشانت کمار نے گزشتہ روز بتایا تھا کہ ریاست میں کارروائی کرتے ہوئے مذہبی مقامات سے اب تک 6031 لاؤڈ اسپیکر ہٹا دیئے گئے ہیں، جبکہ 29674 لاؤڈ اسپیکروں کی آواز کو کم کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کارروائی میں مذہبی رہنماؤں اور تمام مذاہب کے لوگوں کا بھرپور تعاون حاصل ہو رہا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔