کورونا: پیشین گوئی سچ ہونے کے بعد راہل گاندھی نے مودی حکومت پر کیا حملہ

راہل گاندھی نے ہندوستان میں کورونا مریض کی تعداد 20 لاکھ سے تجاوز کرنے کے بعد ایک ٹوئٹ کیا ہے جس میں لکھا ہے ”20 لاکھ کا آنکڑا پار، غائب ہے مودی سرکار۔“

راہل گاندھی
راہل گاندھی
user

تنویر

ہندوستان میں کورونا وائرس انفیکشن کے کیسز لگاتار بڑھتے جا رہے ہیں اور مودی حکومت کی کوئی بھی پالیسی کام کرتی ہوئی نظر نہیں آ رہی ہے۔ اپوزیشن پارٹی لیڈران پی ایم مودی پر بار بار یہ الزام بھی عائد کرتے رہے ہیں کہ وہ عوام کو رام بھروسے چھوڑ چکے ہیں۔ آج کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے اس تعلق سے ایک بار پھر مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ انھوں نے ہندوستان میں کورونا مریض کی تعداد 20 لاکھ سے تجاوز کرنے کے بعد ایک ٹوئٹ کیا ہے جس میں لکھا ہے "20 لاکھ کا آنکڑا پار، غائب ہے مودی سرکار۔"

دراصل راہل گاندھی نے 17 جولائی کو ایک ٹوئٹ کر کے پیشین گوئی کی تھی کہ اگر کورونا کی موجودہ رفتار جاری رہی تو 10 اگست تک 20 لاکھ سے زائد کیسز ہو جائیں گے۔ آج یہ پیشین گوئی سچ ثابت ہوئی اور 7 اگست کو ہی ہندوستان میں کورونا مریضوں کی تعداد 20 لاکھ 27 ہزار 75 ہو گئی ہے۔ قابل ذکر یہ بھی ہے کہ اس سے قبل 14 جولائی کو کیے گئے ایک ٹوئٹ میں راہل گاندھی نے کہا تھا کہ اس ہفتہ کورونا مریضوں کی تعداد 10 لاکھ کا نمبر پار کر جائے گا، اور پھر 17 جولائی کو یہ نمبر پار کر گیا تھا۔

واضح رہے کہ راہل گاندھی لگاتار کورونا سے متعلق مودی حکومت کو نیک مشورے دیتے رہتے ہیں اور کہتے ہیں کہ اس وبا کو روکنے کے لیے حکومت ٹھوس و منظم اقدام کرے، لیکن مرکزی حکومت کی جانب سے ایسا کچھ دیکھنے کو نہیں مل رہا۔ یہی وجہ ہے کہ کورونا کیسز لگاتار بڑھتے جا رہے ہیں اور آج ایک دن میں ریکارڈ 62 ہزار سے زائد مریض سامنے آئے۔

Published: 7 Aug 2020, 12:39 PM
next