کسانوں کے مسئلہ پر راہل گاندھی کا مودی حکومت پر حملہ، ’ملک کو غلہ دینے والا کسان اپنا حق لے کر رہے گا‘

زرعی قوانین کے حوالہ سے کسان طویل مدت سے احتجاج کر رہے ہیں، دریں اثنا، کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے کسانوں کو حمایت دیتے ہوئے مرکزی حکومت پر ایک بار پھر حملہ بولا ہے

تمل ناڈو میں راہل گاندھی / تصویر بشکریہ ٹوئٹر / @INCIndia
تمل ناڈو میں راہل گاندھی / تصویر بشکریہ ٹوئٹر / @INCIndia
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: کسانوں کے مسئلہ پر ایک مرتبہ پھر کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے مودی حکومت پر حملہ بولا ہے۔ انہوں نے ٹوئٹ کر کے کہا کہ ’’جو ملک کو غلّہ دے رہا ہے، وہ کسان اپنا حق لے کر رہے گا۔ زراعت مخالف، ملک مخالف قانون واپس لو۔‘‘

اس سے قبل زرعی قوانین کے خلاف 18 فروری کو راہل گاندھی نے ٹوئٹ کر کے کہا تھا کہ سیدھی بات ہے، تینوں زرعی مخالف قوانین منسوخ کریں! وقت خراب کر کے مودی حکومت ان داتا کو توڑنا چاہتی ہے لیکن ایسا نہیں ہوا۔ حکومت کی ہر ناانصافی کے خلاف، اب کی بار کسان اور ملک ہے تیار۔‘‘

غور طلب ہے کہ کسان مہا پنچایتوں کے پلیٹ فارم سے کسان لیڈر راکیش ٹکیت ملک بھر کے کسانوں کو ایک دھارے میں لانے کا پیغام دے رہے ہیں۔ راکیش ٹکیت حکومت کو کئی مرتبہ تنبیہ کر چکے ہیں کہ حکومت جب تک قانون واپسی نہیں لے گی کسانوں کی دہلی کی سرحدوں سے گھر واپسی نہیں ہوگی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔