پرینکا گاندھی کا مصروف ترین لکھنؤ دورہ ختم، اتوار کو رائے بریلی پہنچیں گی

پرینکا گاندھی کا کہنا ہے کہ یو پی میں عوام بدلاؤ کا من بنا چکی ہے۔ کسانوں، نوجوانوں، خواتین، کاروباری طبقہ اور عام لوگوں کی آواز بن کانگریس پارٹی تبدیلی کے عزم کے ساتھ مضبوط متبادل بن کر ابھرے گی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

تنویر

اتر پردیش کی راجدھانی لکھنؤ میں آج پرینکا گاندھی کا تیسرا دن تھا اور اس دوران انھوں نے مختلف سطحوں پر کئی میٹنگیں کیں۔ پرینکا گاندھی نے ریاست کےآٹھوں زون کے عہدیداروں سے ملاقات کی اور ضلع، شہر، ریاستی سکریٹری، جنرل سکریٹری اور ریاستی نائب صدور سے الگ الگ ملاقات کر کے ان سے زمینی رپورٹ لی۔ خبروں کے مطابق کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے ریاست کے 831 بلاکوں، 2614 وارڈوں اور 8134 نیائے پنچایتوں کی رپورٹ پر دو دن تبادلہ خیال کیا۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق آج میٹنگ کا آخری دور پوروانچل اور اودھ زون کے ساتھ چلا۔ پوروانچل کے 97 بلاکوں اور 975 نیائے پنچایتوں کی تنظیم پر تبادلہ خیال ہوا، جب کہ اودھ کے 133 بلاکوں اور 1330 نیائے پنچایتوں پر جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے سبھی سے رپورٹ لی۔ بعد ازاں پرینکا گاندھی نے بتایا کہ یو پی اسمبلی انتخاب میں ٹکٹ تقسیم میں تنظیم کا کردار انتہائی اہم ہوگا۔ انھوں نے مزید کہا کہ تنظیم کا کام آخری مرحلہ میں ہے اور سبھی کو دن رات محنت کرنے کی ضرورت ہے۔


لکھنؤ میں پارٹی کے ریاستی دفتر میں لگاتار دوسرے دن ہفتہ کو میراتھن میٹنگ کر کے تنظیم کی کارکردگی کا جائزہ کے ساتھ ساتھ پرینکا گاندھی نے زمینی رجحان اور سیاسی حکمت عملی پر غور و خوض کیا۔ انہوں نے ایک ایک ذمہ دار لیڈر سے رپورٹ اور تاثرات حاصل کئے۔ مغربی اترپردش، روہیل کھنڈ اور مدھیہ پردیش کے اضلاع کی بلاک اور نیائے پنچایت جائزہ اور عہدیداروں سے آگے کی حکمت عملی پر تبادلہ خیال کیا۔

پرینکا گاندھی نے اس درمیان ایک ٹوئٹ کر کے بھی اپنی سرگرمیوں کے تعلق سے لوگوں کو جانکاری دی۔ انھوں نے کہا کہ ریاست کے لیڈروں کے ساتھ ملاقاتوں میں موصولہ اطلاعات سے یہ واضح ہے کہ ریاست کے لوگ موجودہ حکومت سے مایوس ہو چکے ہیں اور وہ تبدیلی چاہتے ہیں۔ انھوں نے ٹوئٹ میں لکھا کہ ’’کانگریس دفتر پر ریاستی تنظیم کی میٹنگوں میں عہدیداروں اور ضلع کے لیڈروں سے رپورٹ اور فیڈ بیک لیا۔ اتر پردیش میں عوام بدلاؤ کا من بنا چکی ہے۔ کسانوں، نوجوانوں، خواتین، کاروباری طبقہ اور عام لوگوں کی آواز بن کانگریس پارٹی تبدیلی کے عزم کے ساتھ مضبوط متبادل بن کر ابھرے گی۔‘‘


بہر حال، اترپردیش اسمبلی انتخابات سے قبل کانگریس کے تنظیمی ڈھانچے کو مضبوطی فراہم کرنے کی حکمت عملی مصروف پرینکا گاندھی اب اتوار کو پارٹی صدر سونیا گاندھی کے پارلیمانی حلقہ رائے بریلی کا دورہ کریں گی۔ لکھنؤ میں گذشتہ تین دنوں سے مقیم پرینکا کو ہفتہ کی شام رائے بریلی کے لئے نکلنا تھا لیکن مسلسل میٹنگوں کی وجہ سے انہوں نے اپنا پروگرام تبدیل کردیا۔ پارٹی ذرائع کے مطابق پرینکا گاندھی اب اتوار کی صبح تقریباً آٹھ بجے لکھنؤ سے رائے بریلی کے لئے روانہ ہوں گی، جہاں ان کا چروا سرحد سے بھوئے مئو تک شاندار استقبال کیا جائے گا۔ پرینکا 11 بجے ضلع کانگریس کمیٹی، بلاک صدر، نیائے پنچایت صدر، شہر صدر کے ساتھ میٹنگ کر کے دیہی علاقوں میں کانگریس کے تئیں لوگوں کے رجحانات سے روبرو ہوں گی۔ اس کے بعد وہ شہر کانگریس کمیٹی، وارڈ بورڈ کے ساتھ میٹنگ کریں گی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔