’پٹرول-ڈیزل خریدتے وقت یاد رکھیں، ٹیکس سے 23 لاکھ کروڑ روپے کما چکی ہے حکومت‘

پرینکا گاندھی نے کہا کہ ہر روز جب آپ مہنگا پٹرول و ڈیزل خریدیں تب یاد رکھیے کہ مودی حکومت پٹرولیم مصنوعات پر ٹیکس سے 23 لاکھ کروڑ روپے کما چکی ہے۔

پرینکا گاندھی، تصویر یو این آئی
پرینکا گاندھی، تصویر یو این آئی
user

قومی آوازبیورو

کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے ایک بار پھر پٹرول و ڈیزل کی قیمتوں کو لے کر مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ پرینکا گاندھی نے ٹوئٹ کر کے کہا ہے کہ ہر روز جب آپ مہنگا پٹرول-ڈیزل خریدیں تب یاد رکھیے کہ مودی حکومت پٹرولیم مصنوعات پر ٹیکس سے 23 لاکھ کروڑ روپے کما چکی ہے۔ ہر روز جب مہنگا تیل اور سبزی خریدیں تب یاد رکھیے کہ اس حکومت میں 97 فیصد کنبوں کی آمدنی گھٹ گئی، لیکن خبروں کے مطابق مودی جی کے کھرب پتی دوست ہر روز 1000 کروڑ روپے کماتے ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ جمعرات کو کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے بھی پٹرول و ڈیزل کی قیمتوں کو لے کر مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔ انھوں نے الزام عائد کیا تھا کہ ملک کے عوام کے ساتھ گھناؤنا مذاق چل رہا ہے۔ انھوں نے کہا تھا کہ ’’مرکزی حکومت ہماری عوام کے ساتھ گھناؤنا مذاق کر رہی ہے۔‘‘


واضح رہے کہ پٹرول-ڈیزل کی قیمتوں میں لگاتار اضافہ جاری ہے۔ دہلی میں جمعہ کو ایک بار پھر پٹرول و ڈیزل دونوں 35-35 پیسے فی لیٹر مہنگا ہو گیا۔ دہلی میں پٹرول 106.89 روپے اور ڈیزل 95.62 روپے فی لیٹر فروخت ہو رہا ہے۔ ممبئی میں پٹرول کی قیمت اب 112.78 روپے فی لیٹر ہو گئی ہے جب کہ ڈیزل 103-63 روپے فی لیٹر ہے۔ وہیں کولکاتا اور چنئی میں پٹرول کی قیمت بالترتیب 107.45 روپے فی لیٹر اور 103.92 روپے فی لیٹر ہے۔ ڈیزل کی قیمت 98.73 روپے فی لیٹر اور 99.92 روپے فی لیٹر ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔