شہریت ترمیمی قانون پر پی ایم مودی کا رویہ آمرانہ: سنجے دت

پڈوچیری کانگریس کے انچارج سنجے دت کا کہنا ہے کہ پورے ملک میں لوگ سی اے اے کے خلاف ہیں اور ان کا اس بات پر زور دینا کہ یہ قانون واپس نہیں ہو گا، واضح طور پر ان کے آمریت پسند رویہ کی عکاسی کرتا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

پڈوچیری: پڈوچیری میں کانگریس امور کے انچارج سنجے دت نے پیر کے روز کہا کہ شہریت (ترمیمی) قانون پر وزیر اعظم نریندر مودی کا زور دیا جانا ان کے آمرانہ رویہ کی عکاسی کرتا ہے جس کی مذمت کیے جانے کی ضرورت ہے۔ سنجے دت نے یہاں صحافیوں سے کہا کہ پورے ملک میں بڑی تعداد میں لوگ اس کے خلاف ہیں اور ان کا اس بات پر زور دینا کہ یہ قانون واپس نہیں ہو گا، واضح طور پر ان کے آمریت پسند رویہ کی عکاسی کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت ملک کے سامنے متعدد سلگتے مسائل ہیں لیکن وزیر اعظم ان مسائل سے لوگوں کی توجہ ہٹا رہے ہیں۔ سنجے دت نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سماج کے دبے کچلے لوگوں پر حملہ کر رہی ہے اور پارٹی کا یہ رخ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ سے میل کھاتا ہے اور دونوں ہی درج فہرست ذات، درج فہرست قبائل اور دیگر پسماندہ طبقات کی ریزرویشن کو ختم کرنے پر آمادہ ہیں۔


کانگریس انچارج نے کہا کہ یہ بہت بدبختانہ بات ہے کہ بی جے پی کی ایسی ذہنیت ہے کہ ریزرویشن ایک فلاحی کام ہے جبکہ یہ سماج کے دلت، دبے کچلے اور استحصال زدہ طبقوں کی فلاح و بہبود کے لئے ایک التزام ہے تاکہ انہیں معاشرے کے مرکزی دھارے میں لایا جا سکے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔