پی ایم مودی نے ہماچل پردیش میں قدرتی آفت کو لے کر کی اعلیٰ سطحی میٹنگ، جے پی نڈا کل ریاست کا کریں گے دورہ

وزیر اعظم نریندر مودی نے ہماچل پردیش میں موسلادھار بارش، سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ کے سبب ہونے والے نقصانات کو لے کر ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ کی اور حالات و راحت رسانی کے کاموں کا جائزہ لیا۔

<div class="paragraphs"><p>پی ایم مودی، تصویر یو این آئی</p></div>

پی ایم مودی، تصویر یو این آئی

user

قومی آوازبیورو

ہماچل پردیش میں موسلادھار بارش اور جگہ جگہ لینڈ سلائیڈنگ کے سبب لوگوں میں زبردست دہشت کا ماحول پیدا ہو گیا ہے۔ سینکڑوں افراد کے گھر تباہ ہو گئے ہیں اور سرکاری ملکیت کو بھی کافی نقصان پہنچا ہے۔ اس درمیان ریاست میں آفت کے بعد بچاؤ کام کو لے کر وزیر اعظم نریندر مودی نے اعلیٰ سطحی میٹنگ کی ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے ہماچل پردیش میں موسلادھار بارش، سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ کے سبب ہونے والے نقصانات کو طلب اعلیٰ سطحی میٹنگ کی میں حالات و راحت رسانی کے کاموں کا جائزہ لیا۔

یہ اعلیٰ سطحی میٹنگ وزیر اعظم کی سرکاری رہائش 7 لوک کلیان مارگ پر تقریباً ایک گھنٹے تک چلی۔ اس میٹنگ میں مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ، مرکزی وزیر دفاع راجناتھ سنگھ اور بی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈا بھی موجود رہے۔ اس درمیان خبریں سامنے آ رہی ہیں کہ جے پی نڈا بارش، سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ کے سبب ہماچل پردیش میں ہوئے زبردست نقصانات کا جائزہ لینے کے لیے کل یعنی 20 اگست کو اپنی آبائی ریاست کا دورہ کریں گے۔


میڈیا رپورٹس کے مطابق جے پی نڈا اس دورہ کے دوران قدرتی آفت میں ہلاک لوگوں کے اہل خانہ سے ملاقات کریں گے اور ساتھ ہی وہ سمر ہل، شملہ میں زبردست بارش کے سبب منہدم ہوئے قدیم شیو مندر کا معائنہ کریں گے۔ شملہ اور بلاس پور میں مقامی انتظامیہ کے ساتھ وہ میٹنگ کر راحت، بچاؤ اور بازآبادکاری کے کاموں پر تبادلہ خیال بھی کریں گے۔ بتایا جاتا ہے کہ نڈا اتوار کی صبح 9 بجے پانوٹا صاحب (سرمور) پہنچیں گے، اور پھر اس کے بعد سڑک کے راستے 9.35 بجے سرموری تال اور کچی ڈھانگ گاؤں پہنچیں گے جہاں وہ سرموری تال علاقہ میں بادل پھٹنے سے پیدا حالات کا جائزہ لیں گے۔ وہ یہاں اس حادثہ میں ہلاک 5 اراکین کے کنبوں سے ملاقات بھی کریں گے۔ تقریباً 11.30 بجے نڈا شملہ کے شیوباؤڑی، سمرہل پہنچیں گے۔ یہاں منہدم شیو مندر کا وہ معائنہ کریں گے جس میں اب تک 16 لوگوں کی لاشیں برآمد ہو چکی ہیں اور ہنوز راحت و بچاؤ کا عمل جاری ہے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;