پاکستان کو لگ سکتا ہے جھٹکا، چمپئنز ٹرافی کے لیے پاکستان دورہ سے منع کر سکتی ہے ہندوستانی ٹیم!

کھیل کے وزیر انوراگ ٹھاکر کا کہنا ہے کہ کئی ممالک سیکورٹی اسباب کی بنا پر پاکستان جانے سے پیچھے ہٹے ہیں، جب چمپئنز ٹرافی کا وقت آئے گا تو سیکورٹی کا جائزہ لیتے ہوئے مناسب فیصلہ کیا جائے گا۔

انوراگ ٹھاکر، تصویر یو این آئی
انوراگ ٹھاکر، تصویر یو این آئی
user

تنویر

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل یعنی ’آئی سی سی‘ نے 16 نومبر کو آئندہ 10 سالوں کے لیے اپنے ٹورنامنٹس کا اعلان کرنے کے ساتھ ساتھ میزبانی کرنے والے ممالک کے نام کا بھی اعلان کر دیا۔ پاکستان کو 2025 میں چمپئنز ٹرافی کی میزبانی کی ذمہ داری دی گئی ہے۔ اس بات کی خوشی ابھی پاکستان منا ہی رہا ہے کہ اب اس میزبانی پر اندیشے کے بادل منڈلاتے نظر آ رہے ہیں۔

دراصل ہندوستان کے وزیر برائے کھیل انوراگ ٹھاکر کا ایک بیان سامنے آیا ہے جس سے امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ ہندوستانی ٹیم پاکستان کا دورہ کرنے سے منع بھی کر سکتی ہے۔ انوراگ کا چمپئنز ٹرافی کے تعلق سے کہنا ہے کہ وقت آنے پر دیکھا جائے گا کہ کیا کرنا ہے۔ انھوں نے واضح لفظوں میں یہ بھی کہا کہ جو بھی فیصلہ لیا جائے گا اس میں وزارت داخلہ بھی شامل ہوگا۔ انوراگ ٹھاکر کا کہنا ہے کہ حال ہی میں کئی ممالک سیکورٹی اسباب کی بنا پر پاکستان جانے سے پیچھے ہٹ گئے ہیں۔ جب چمپئنز ٹرافی کا وقت آئے گا تو سیکورٹی کا جائزہ لیا جائے گا اور مناسب فیصلہ لیا جائے گا۔


قابل ذکر یہ ہے کہ 10 سالوں کے بعد پہلا ایسا موقع آیا ہے جب پاکستان کو کسی آئی سی سی ٹرافی کی میزبانی ملی ہے۔ سال 2009 میں سری لنکا کی ٹیم پر پاکستان کے لاہور میں حملہ ہونے کے بعد پاکستان کسی بھی بین الاقوامی میچ کی میزبانی نہیں کر پایا ہے۔ ذرائع سے ملی جانکاری کے مطابق اگر کوئی مسئلہ ہوتا ہے تو پاکستان کرکٹ بورڈ چمپئنز ٹرافی کی میزبانی یو اے ای کی زمین پر کرا سکتا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔