مہاتما گاندھی پر توہین آمیز تبصرہ: ملزم کالی چرن مہاراج کی گرفتاری پر ایم پی کے وزیر داخلہ کو اعتراض

نروتم مشرا نے یہاں میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ مہاراج کالی چرن کو گرفتار کرنے کے طریقے پر انہیں سخت اعتراض ہے۔ وہاں کی حکومت نے انٹر اسٹیٹ پروٹوکول پر عمل نہیں کیا۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

بھوپال: مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ نروتم مشرا نے چھتیس گڑھ پولیس کے ذریعہ ملزم کالی چرن کی کھجوراہو سے گرفتاری کے طریقے پر آج اعتراض کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کانگریس حکومت کو ’انٹر اسٹیٹ پروٹوکول‘ کی خلاف ورزی نہیں کرنی چاہئے تھی۔ نروتم مشرا نے یہاں میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ مہاراج کالی چرن کو گرفتار کرنے کے طریقے پر انہیں سخت اعتراض ہے۔ وہاں کی حکومت نے انٹر اسٹیٹ پروٹوکول پر عمل نہیں کیا۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ انہوں نے مدھیہ پردیش کے پولیس ڈائریکٹر جنرل کو ہدایت دی ہے کہ وہ چھتیس گڑھ کے پولیس ڈائریکٹر جنرل سے فوراً بات چیت کرکے اعتراض کا اظہار کریں اور اپنی مخالفت درج کرائیں۔ بغیر اطلاع کے گرفتار کرنا قابل اعتراض ہے۔ وفاقی حدود اس کی اجازت نہیں دیتی، انہیں اطلاع کرنی چاہیے تھی۔ اگر چھتیس گڑھ حکومت چاہتی تو نوٹس دے کر اسے (کالی چرن) بلوا سکتی تھی۔ اس معاملہ پر چھتیس گڑھ کے وزیر اعلیٰ بھوپیش بگھیل نے بھی طنز کیا ہے۔


وہیں چھتیس گڑھ کے وزیر اعلیٰ بھوپیش بگھیل نے پولیس کی کارروائی کو درست قرار دیا ہے۔ انہوں نے ٹوئٹر پر لکھا کہ انصاف میں اتنی تاخیر نہیں ہونی چاہیے کہ ناانصافی محسوس ہونے لگے۔ کارروائی کے بارے میں معلومات دیتے ہوئے، وزیر اعلیٰ بگھیل نے ایک ٹویٹ کے ذریعے کہا ’’چھتیس گڑھ پولیس نے کالی چرن مہاراج کے اہل خانہ اور وکیل کو ان کی گرفتاری کے بارے میں مطلع کر دیا ہے۔ اسے 24 گھنٹے میں عدالت میں پیش کیا جائے گا۔‘‘

(یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


    Published: 30 Dec 2021, 12:11 PM