نوح تشدد: کانگریس ایم ایل اے آفتاب نے مونو مانیسر پر لوگوں کو اکسانے کا الزام لگایا

نوح کیس پر کانگریس ایم ایل اے آفتاب احمد نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے پولیس انتظامیہ کو اس بارے میں خبردار کیا تھا

<div class="paragraphs"><p>سوشل میڈیا</p></div>

سوشل میڈیا

user

قومی آوازبیورو

نوح: کانگریس کے رکن اسمبلی  آفتاب احمد نے مونو مانیسر پر نوح تشدد کو لے کر بڑا الزام لگایا ہے۔ نیوز پورٹل ’اے بی پی‘ پر شائع خبر کے مطابق آفتاب نے کہا کہ مونو مانیسر نے لوگوں کو اکسایا ہے۔ کانگریس ایم ایل اے نے کہا کہ پولیس بھی لاپرواہی کا مظاہرہ کر رہی ہے اور ان کا انتظام ٹھیک نہیں ہے۔ اس واقعہ سے علاقے کے بھائی چارے کو نقصان پہنچا ہے۔ ایم ایل اے آفتاب احمد نے کہا کہ جو بھی غلط کام کر رہا ہے اس کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ لوگوں کو تشدد کے لیے اکسایا گیا ہے۔

کانگریس ایم ایل اے آفتاب احمد نے کہا کہ اس علاقے کے پرانے بھائی چارے کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی گئی ہے ۔ مونو مانیسر سمیت کئی لوگوں نے ویڈیو پوسٹ کرکے اور چیلنج دے کر لوگوں کو مشتعل کیا۔ پورے معاشرے کو نشانہ بنایا گیا۔ پولیس انتظامیہ کے نظام پر سوال اٹھاتے ہوئے نوح کے ایم ایل اے نے کہا کہ پولیس بھی لاپرواہی کا شکار ہے۔ فائرنگ کے سوال پر آفتاب نے کہا کہ جو بھی قصوروار ہے اس کے خلاف سخت کارروائی ہونی چاہیے۔ ایم ایل اے نے کہا کہ انہوں نے اس معاملے میں پولیس انتظامیہ کو خبردار کیا ہے۔


کانگریس ایم ایل اے کا کہنا ہے کہ لوگوں کو منانے  کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ حالات کو معمول پر لانے میں سب کو تعاون کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ایسی انتظامیہ اور پولیس کی ناکامی پہلے کبھی نہیں دیکھی گئی۔ ایم ایل اے نے کہا کہ سب مل کر امن برقرار رکھیں اور افواہوں پر توجہ نہ دیں۔

واضح رہے  کہ نوح تشدد کے بعد ہریانہ کی  کھٹر حکومت کانگریس کے حملوں کی  زد میں آگئی ہے۔ سابق وزیر اعلی بھوپیندر سنگھ ہڈا، راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ دیپیندر سنگھ ہڈا، راجیہ سبھا ممبران رندیپ سنگھ سرجے والا، کرن چودھری، کماری سیلجا سمیت کئی بڑے کانگریس لیڈروں نے ہریانہ حکومت کو نشانہ بنایا ہے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


/* */