این ایس اے ڈووال نے تشدد سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا

شمال مشرقی دہلی کے تشدد سے متاثرہ علاقوں کے حالات کا جائزہ لینے کے لئے این ایس اے ڈووال نے دورہ کیا اور دہلی پولیس کے کمشنر سے ملاقات کی

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

دہل کے شمال مشرقی علاقہ میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف مظاہرہ میں ہوئے تشدد د میں تازہ خبریں ملنے تک 18 لوگوں کی جان جا چکی ہے۔ اس کشیدہ ماحول کے دوران قومی سلامتی کے مشیر (این ایس اے) اجیت ڈووال نے کل رات متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا ہے۔ انہوں نے گاڑی میں بیٹھ کر سیلم پور، بھجن پورا، موج پور، یمنا وہار جیسے تشدد سے متاثرہ علاقوں کا جائزہ لیا اور اس کے بعد دہلی پولیس کے کمشنر اور کئی دیگر اعلی افسران سے میٹنگ کی۔

واضح رہے خبروں کے مطابق وزارت داخلہ نے متاثرہ علاقوں میں دہلی پولیس کے ساتھ ایس ایس بی اور آئی ٹی بی پی کے جوانوں کو تعینات کیا ہے۔ ان علاقوں میں ریپڈ ایکشن فورس کے جوان بھی موجود ہیں۔ ذرائع کے مطابق وزیر داخلہ امت شاہ نے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران تین مرتبہ میٹنگ کی۔ ایک میٹنگ میں نو منتخب اسپیشل کمشنر (لاء اینڈ آرڈر) ایس این شریواستو بھی موجود تھے اور یہ میٹنگ تین گھنٹے تک چلی۔

واضح رہے اس دوران جواہر لال نہرو اسٹوڈنٹس یونین سے تعلق رکھنے والے طلباء اور سیول رائٹس گروپ کے لوگوں نے وزیر اعلی اروند کیجریوال کی رہائش کے باہر مظاہرہ کیا اور وہیں پر دھرنے پر بیٹھ گئے۔ ان لوگوں کا مطالبہ ہے کہ دہلی میں ہوئے تشدد کو لے کر اسپیشل میٹنگ طلب کی جائے۔ واضح رہے مشرقی دہلی کے متاثرہ علاقوں میں آج بھی سرکاری اور پرائیویٹ اسکول بند رہیں گے اور ان علاقوں میں بورڈ کے امتحانات بھی ملتوی کر دیئے گئے ہیں۔

next