علیحدگی پسند سکھ گروپوں کی تحقیقات کے لیے این آئی اے ٹیم پہنچی کناڈا

این آئی اے کناڈا میں دہشت گرد تنظیم سکھ فور جسٹس اور دیگر خالصتان حامی گروپوں ببر خالصہ انٹرنیشنل، خالصتان زندہ باد فورس اور خالصتان ٹائگر فورس سے غیرملکی فنڈنگ لنک کی جانچ کے لئے گئی ہے۔

این آئی اے، تصویر یو این آئی
این آئی اے، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

اوٹاوا/نئی دہلی: علیحدگی پسند سکھ گروپوں کی سرگرمیوں میں اضافہ کے درمیان رائل کنیڈین ماونٹیڈ پولیس (آر سی ایم پی) کی دعوت پر قومی تفتیشی ایجنسی (این ائی اے) کی اعلی سطحی ٹیم کناڈا پہنچی ہے تاکہ دہشت گردانہ وارداتوں کے سلسلہ میں جانچ اور دیگر مجرمانہ معاملات پر بات چیت میں بہتر تال میل قائم کیا جاسکے۔ این آئی اے کی ٹیم انسپکٹر جنرل آف پولیس کی قیادت میں 4-5 نومبر کو کناڈا پہنچی۔

رپورٹوں کے مطابق این آئی اے کناڈا میں دہشت گرد تنظیم سکھ فور جسٹس (ایس ایف جے) اور دیگر خالصتان حامی گروپوں ببر خالصہ انٹرنیشنل، خالصتان زندہ باد فورس اور خالصتان ٹائگر فورس سے غیرملکی فنڈنگ لنک کی جانچ کے لئے گئی ہے۔ سکھ فورجسٹس پر ہندوستانی حکومت نے دہشت گردی سے متعلق سرگرمیوں کے لئے پابندی لگا رکھی ہے۔ کناڈا، برطانیہ، امریکہ، آسٹریلیا، فرانس اور جرمنی سے ان علیحدگی پسند گروپوں کی غیرملکی فنڈنگ کی جانچ کی جائے گی۔


اوٹاوہ میں ہندوستانی ہائی کمیشن کے ایک بیان کے مطابق این آئی اے کی ٹیم نے آر سی ایم پی کے سینئر حکام کے ساتھ مل کر دہشت گردی اور کئی دیگرسنگین مجرمانہ امور پر چل رہی چھان بین پر ثبوت جمع کئے جانے پر تفصیلی بات چیت کی تاکہ ہندستان اور کناڈا کے دونوں کی جگہوں پر ملزمان پر صحیح کارروائی کی جاسکے۔

کناڈا میں ہندوستانی ہائی کمشنر اجے بساریا نے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ ہندوستان۔کناڈا کی اسٹریٹجک شراکت داری سے جرائم اور دہشت گردی کی تحقیقات میں تعاون مضبوط ہوگا۔ ہندوستان اور کناڈا کو محفوظ رکھنے کے لئے آر سی ایم پی اور این آئی اے دونوں مل کر کام کر رہے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔