بابل سپریو کو لے کر بنگال میں نیا تنازع، گورنر جگدیپ دھنکھر نے حلف برداری کی فائل واپس بھیجی

راج بھون سے قانون ساز اسمبلی میں فائلوں کی واپسی اس بار کوئی نئی بات نہیں ہے۔ تاہم، بابل کی حلف برداری کی فائل کی واپسی ایک مختلف معنی رکھتی ہے۔

بابل سپریو/ آئی اے این ایس
بابل سپریو/ آئی اے این ایس
user

یو این آئی

کلکتہ: بالی گنج حلقہ سے نو منتخب ترنمول کانگریس کے امیدوار بابل سپریا اب اسپیکر اور گورنر جگدیپ دھنکھر کے درمیان تنازع کی وجہ بن گئے ہیں۔ گورنر جگدیپ دھنکھر نے بابل کی حلف برداری کی فائل اسمبلی کو واپس بھیج دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ فائل پر اسی وقت دستخط کریں گے جب وہ اسمبلی سے متعلق تمام معلومات کا جواب دیں گے۔

راج بھون سے قانون ساز اسمبلی میں فائلوں کی واپسی اس بار کوئی نئی بات نہیں ہے۔ تاہم، بابل کی حلف برداری کی فائل کی واپسی ایک مختلف معنی رکھتی ہے۔ کیونکہ گورنر جگدیپ دھنکھر ایک وقت میں بابل سپریہ کو بچانے کے لیے جادوپور یونیورسٹی پہنچ گئے تھے۔ تاہم اس وقت بابل مرکز میں بی جے پی حکومت میں وزیر تھے۔


اسمبلی ذرائع کے مطابق بابل نے بالی گنج سیٹ پر ضمنی انتخابات میں کامیابی حاصل کرنے کے بعد اپنا سرٹیفکیٹ اسمبلی اسپیکر کو پیش کیا۔ اس کے بعد اسپیکر نے روایات کے مطابق بابل سپریا کے حلف اٹھانے کی اجازت مانگتے ہوئے فائل گورنر کو بھیج دی۔ لیکن جگدیپ دھنکھر نے اس فائل پر دستخط نہیں کیے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔