این سی بی اور ممبئی پولیس نے سمیر وانکھیڈے کے خلاف بدعنوانی کی جانچ شروع کی

بدھ کی دوپہر این سی بی ٹیم ممبئی پہنچ گئی اور بتایا جا رہا ہے کہ اس نے جانچ کے لیے آزاد گواہ پربھاکر سیل کو طلب کرنے کے علاوہ وانکھیڈے کا بیان بھی درج کیا۔

سمیر وانکھیڈے، تصویر آئی اے این ایس
سمیر وانکھیڈے، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

نارکوٹکس کنٹرول بیورو (این سی بی) کی وجلنس ٹیم اور اے سی پی سطح کے ممبئی پولیس افسر نے بدھ کو یہاں این سی بی کے علاقائی ڈائریکٹر سمیر وانکھیڈے کے خلاف ’جبراً وصولی‘ کے الزامات اور دیگر ایشوز کی آزادانہ جانچ شروع کی ہے۔ این سی بی کی ٹیم بدھ کی دوپہر ممبئی پہنچی اور بتایا جا رہا ہے کہ اس نے جانچ کے لیے آزاد گواہ پربھاکر سیل کے طلب کرنے کے علاوہ وانکھیڈے کا بیان بھی درج کیا ہے۔

وانکھیڈے کے خلاف ممبئی کے الگ الگ تھانوں میں درج کم از کم چار شکایتیں اب اے سی پی سنبھالیں گے، جو معاملے کی جانچ کرنے کے ساتھ ہی رپورٹ تیار کریں گے۔ این سی بی وجلنس ٹیم کے رکن گیانیشور سنگھ نے میڈیا اہلکاروں سے کہا کہ ’’ہم نے جانچ شروع کر دی ہے۔ یہ ایک بہت ہی حساس جانچ ہے، کچھ بھی بتانا جلد بازی ہوگی۔ ہم سبھی پہلوؤں کی جانچ کریں گے اور بعد میں میڈیا کو اس تعلق سے جانکاری دیں گے۔‘‘


وانکھیڈے کے خلاف دو آزادانہ جانچ چلیں گی۔ ان پر گزشتہ تین ہفتوں کے دوران نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے وزیر نواب ملک کے ذریعہ کئی سنگین الزامات لگائے گئے ہیں جب کہ 23 اکتوبر کے سیل کے حلف نامے میں بھی وانکھیڈے کے خلاف کئی الزامات لگائے گئے ہیں۔

دیگر باتوں کے علاوہ سیل نے دعویٰ کیا تھا کہ ایک دیگر این سی بی آزاد گواہ مبینہ طور پر بالی ووڈ اداکار شاہ رخ خان سے 18 کروڑ روپے نکالنے کے لیے ایک ذریعہ کی شکل میں کام کر رہا تھا، جس میں سے 8 کروڑ روپے مبینہ طور پر وانکھیڈے کے لیے تھے۔ الزام کے مطابق یہ وصولی شاہ رخ کے بیٹے آرین خان کو چھوڑنے کی عوض میں کی جانی تھی۔ ممبئی میں این سی بی افسر کے خلاف الگ الگ معاملوں میں کم از کم 4 مختلف شکایتیں درج کی گئی ہیں، جس کی جانچ اے سی پی سطح کے افسر کریں گے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔