’مسلمانوں کا کام صرف کھانا، پینا اور بچے پیدا کرنا‘، یوگی حکومت میں وزیر بلدیو سنگھ کا متنازعہ بیان

بلدیو سنگھ نے کہا کہ ’’مسلم تو پہلے سے ہی بچے پیدا کرنے کا کام کر رہے ہیں، ان کو کون روک رہا، ان کا کام ہی صرف کھانا، پینا اور بچے پیدا کرنا ہے، بچوں کی تعلیم اور بہتر پرورش کرنا ان کی سوچ نہیں ہے۔‘‘

بلدیو سنگھ اولکھ، تصویر ٹوئٹر @BaldevAulakh
بلدیو سنگھ اولکھ، تصویر ٹوئٹر @BaldevAulakh
user

قومی آوازبیورو

اتر پردیش کی یوگی حکومت میں وزیر بلدیو سنگھ اولکھ نے مسلمانوں کی آبادی کے تعلق سے ایک انتہائی متنازعہ بیان دیا ہے۔ سنبھل میں مسلمانوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے بلدیو سنگھ نے کہا کہ ’’مسلم تو پہلے سے ہی بچے پیدا کرنے کا کام کر رہے ہیں، ان کو کون روک رہا ہے۔ ان کا کام ہی صرف کھانا، پینا اور بچے پیدا کرنا ہے۔ بچوں کو تعلیم یافتہ بنانا، بہتر پرورش کرنا ان کی سوچ نہیں ہے۔‘‘

بلدیو سنگھ نے یہ بیان اسدالدین اویسی کی پارٹی آل انڈیا مجلس اتحادالمسلمین کے ایک لیڈر کی اس ویڈیو پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے دیا جس میں کہا جا رہا ہے کہ مسلمانوں کو زیادہ بچے پیدا کرنے چاہئیں تاکہ اویسی وزیر اعظم بن سکیں۔ بلدیو سنگھ نے سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ شفیق الرحمن برق کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ ان جیسے لیڈر خواتین اور لڑکیوں کے لیے بے عزتی والے تبصرے کرتے ہیں۔


مرکزی حکومت کے ذریعہ لڑکیوں کی شادی کی عمر 18 سال سے بڑھا کر 21 سال کیے جانے کی مخالفت کرنے والی سماجوادی پارٹی کی بلدیو سنگھ نے مذمت کی۔ انھوں نے کہا کہ سماجوادی پارٹی لیڈران لڑکیوں کی شادی کی عمر بڑھائے جانے کی مخالفت کر رہے ہیں جو ان کی خواتین مخالف سوچ ظاہر کرتی ہےـ

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔