مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ شریعت کے مطابق نکاح کے معاملات کو انجام دیں: مولانا رابع حسنی

مولانا رابع حسنی نے کہا کہ ’’مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ شادی بیاہ کے موقع پر بیجا رسوم ورواج سے اجتناب کریں اور سنت و شریعت کے مطابق نکاح کے معاملات کو انجام دیں۔‘‘

رابع حسنی ندوی
رابع حسنی ندوی
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ نے مسلمانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ شادی بیاہ کے موقع پر بیجا رسوم و رواج سے اجتناب کریں اور سنت و شریعت کے مطابق نکاح کے معاملات کو انجام دیں۔ اصلاح معاشرہ کمیٹی آل انڈیا مسلم پرسنل لابورڈ کے زیر اہتمام منعقد ہونے والے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے صدر مولانا رابع حسنی ندوی نے کہا کہ اصلاح معاشرہ کمیٹی کی جانب سے آسان نکاح مہم کی شکل میں کی جا رہی جدوجہد کی ستائش کی اور علمائے کرام اور سماجی کارکنان سے اس مہم کو آگے بڑھانے کی گذارش کی۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس کے نتیجے میں معاشرے میں مثبت تبدیلی پیدا ہوگی۔

مولانا رابع حسنی ندوی نے کہا، ’’دین اسلام زندگی کے تمام شعبوں میں ہماری رہنمائی کرتا ہے، اس لیے مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ ہر شعبہ میں حلال و حرام کی حد بندیوں کا خیال رکھیں، بطور خاص اپنے معاملات کو درست رکھیں، ایک دوسرے کے حقوق کی ادائیگی کا اہتمام کریں اور اپنے معاشرتی امور کو شریعت کے مطابق انجام دیں، خصوصاً اسوۂ نبوی کے مطابق نکاح کا انعقاد کریں۔‘‘


انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں نے دین کو عبادات کی حد تک محدود کر دیا ہے اور معاشرتی امور میں غفلت برتی جا رہی ہے، شادیوں میں جہیز کا لین دین ہو رہا ہے اور اسراف سے کام لیا جا رہا ہے، جس کے نتیجے میں اسلام اور اسلامی شریعت کی بدنامی ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ شادی بیاہ کے موقع پر بیجا رسوم ورواج سے اجتناب کریں اور سنت و شریعت کے مطابق نکاح کے معاملات کو انجام دیں۔‘‘

مولانا رابع حسنی نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ نکاح کو آسان بنانے کے سلسلے میں اصلاح معاشرہ کمیٹی آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کی جانب سے آسان مسنون نکاح مہم کی شکل میں جدوجہد کی جا رہی ہے۔ انہوں نے اس مہم کو اہم قرار دیتے ہوئے علمائے کرام اور سماجی کارکنان سے اس مہم کو آگے بڑھانے کی گزارش کی اور اس امید کا اظہار کیا کہ اس کے نتیجے میں معاشرے میں مثبت تبدیلی پیدا ہوگی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔