سعودی پبلک سیکورٹی کے سربراہ بدعنوانی کے الزام میں برطرف

سرکاری نیوز ایجنسی نے بتایا کہ الحربی پر سرکاری اور نجی شعبوں سے تعلق رکھنے والے 18 افراد کی شرکت کے ساتھ جعل سازی، رشوت اور عہدے کا غلط استعمال سمیت مختلف جرائم میں ملوث ہونے کا شبہ ہے۔

سعودی فرماں روا شاہ سلمان، تصویر آئی اے این ایس
سعودی فرماں روا شاہ سلمان، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

دوحہ: سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبدالعزیز السعود نے عوامی فنڈز کے غبن کے الزام میں گزشتہ روز پبلک سیفٹی کے ڈائریکٹر خالد بن قرار الحربی کو برطرف کر دیا اور ان کے خلاف تحقیقات کا حکم دیا۔ سرکاری نیوز ایجنسی ایس پی اے نے یہ اطلاع دی۔ انہوں نے کہا کہ الحربی پر سرکاری اور نجی شعبوں سے تعلق رکھنے والے 18 افراد کی شرکت کے ساتھ جعل سازی، رشوت اور عہدے کا غلط استعمال سمیت مختلف جرائم میں ملوث ہونے کا شبہ ہے۔

واضح رہے کہ جب سے شاہ سلمان کے بیٹے محمد بن سلمان تخت کے جانشیں بنے ہیں، انہوں نے سعودی عرب میں بڑے پیمانے پر انسداد بدعنوانی مہم شروع کی ہے اور شاہی خاندان کے بہت سے ارکان، اعلیٰ عہدے داروں اور تاجروں کو مالی جرم کے شبہ کی بنیاد پر حراست میں لے لیا گیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔