ممبئی: معروف مسلم سیاست داں شیخ شمیم احمد کا انتقال، آج تدفین ہوگی

ممبئی کے معروف سیاستداں اور سابق ایم ایل اے شیخ شمیم احمد اتوار کے روز انتقال کر گئے ان کی تدفین پیر یعنی کہ آج جنوبی ممبئی کے ناریل واڑی قبرستان میں عمل میں آئے گی۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

ممبئی: معروف سیاستداں اور سابق ایم ایل اے شیخ شمیم احمد اتوار کے روز انتقال کر گئے ان کی تدفین پیر یعنی کہ آج جنوبی ممبئی کے ناریل واڑی قبرستان میں عمل میں آئے گی۔ مرحوم شمیم شیخ کے پسماندگان میں بیوہ اور دو بیٹے معروف شاعر عبید اعظم اعظمی اور شیخ عبد الرحمن اور دو بیٹیاں ڈاکٹر شیخ سلمی اور شیخ عذرا شامل ہیں۔

مرحوم شیخ شمیم احمد 1980 میں چنچپوکلی (بائیکلہ) اسمبلی حلقہ سے کانگریسی کے ٹکٹ پر مہاراشٹر اسمبلی کے لیے منتخب ہوئے تھے اور ایک ایم ایل اے کی حیثیت سے اس مسلم اکثریتی حلقہ میں مختلف ترقیاتی کاموں کو تکمیل تک۔پہنچایاتھا۔ وہ ایک طویل عرصے تک ممبئی کانگریس کمیٹی کے نائب صدر بھی رہے۔

شیخ شمیم احمد مہاراشٹر اسمبلی میں مسلم مسائل کو بے با کی سے اٹھانے کے لیے پہچانے جاتے تھے اور اپنے سیاسی کیریئر میں انھوں نے بلا تفریق مذہب و ملت عوام کے لیے دن رات کام کیا۔


تیزی سے بدلتے سیاسی منظر نامے سے دل برداشتہ شیخ شمیم احمد نے عملی سیاست سے نوے کی دہائی میں کنارہ کشی اختیار کر لی تھی،ضعیف العمری کے سبب بھی زیادہ سر گرم نہیں رہے،سن کے چھوٹے صاحب زادہ عبدالرحن اور ایک رشتہِ دارکے بیرون ملک۔سے آمد کے بعد ہی تدفین عمل میں آئے گی۔سن بڑے صاحبزاد ہ عبید اعظم اعظمی معروف شاعر ہیں اورسن کی شاعری دل کو چھو لیتی ہے جبکہ ممبئی کے روزنامہ ہم آپ میں۔روزانہ قطعہ شائع ہوتا ہے۔

ان کے انتقال پر شعبہ اردو کے اسسٹنٹ لیکچرار قمر صدیقی نے گہرے رنج وغم کا اظہارکرتے ہوئے کہاکہ سیاست کے علاہ وہ ادبی سرگرمیوں میں بھی سرگرم رہے اور ان کا تعلق کئی اداروں سے رہا،صحافی جاوید جمال الدین نے کہاکہ 80 کی دہائی میں جب جنتا پارٹی کا عروج تھا،کانگریس کے ٹکٹ پر شمیم شیخ کی کامیابی ان کی مقبولیت کی علامت تھی ،انہوں نے کئی ترقیاتی کام کیے اور اس کے لیے یاد رکھا جائے گا ،پہلے جنوبی ممبئی میں ورلی علاقے میں رہائش پذیر تھے،لیکن بعد میں کرلیا منتقل ہوگئے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔