موہن بھاگوت کو بدعنوان آر ایس ایس پرچارک کے خلاف کارروائی کرنی چاہیے: کانگریس

پون کھیڑا نے بتایا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس کے مابین بھتہ خوری کا کھیل مسلسل جاری ہے اور اسی وجہ سے دہلی میں بی جے پی ہیڈکوارٹر ایک فائیو اسٹار ہوٹل کی طرح بنا ہوا ہے۔

پون کھیڑا / یو این آئی
پون کھیڑا / یو این آئی
user

یو این آئی

نئی دہلی: کانگریس نے کہا ہے کہ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ آر ایس ایس کے علاقائی پرچارک نمبارام، راجستھان کے معطل میئر سومیا گجر کے شوہر اور بی جے پی لیڈر راجارام، جو گزشتہ ماہ سامنے آیا ویڈیو صحیح پایا گیا اور اب آر ایس ایس کے سربراہ موہن بھاگوت کو اس سلسلے میں ملک کو جواب دینا چاہیے۔

کانگریس ترجمان پون کھیڑا نے منگل کو یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ نمبارام کے گزشتہ ماہ سامنے آنے والی آڈیو ویڈیو میں کمپنی کے نمائندے کو دھمکی دینے اور 10 فیصد کمیشن لینے کا مطالبہ کرنے والی آڈیو ویڈیو لیبارٹری میں صحیح پائی گئی ہے، لہذا سنگھ کے سربراہ کو بتانا چاہیے کہ وہ اپنے صوبائی پرچارک کے خلاف کس طرح کی کارروائی کر رہا ہے؟


انہوں نے بتایا کہ ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد راجستھان کے اینٹی کرپشن بیورو کی جانب سے آر ایس ایس کے صوبائی سربراہ اور دیگر کے خلاف ایف آئی آر درج کی تھی۔ بعد میں بیورو نے وہ ویڈیو تصدیق کے لئے لیبارٹری میں بھیجا تھا، جوکہ آڈیو ویڈیو مستند پائی گئی ہے، جس کی بنیاد پر نمبارام اور بی جے پی رہنما راجارام اور دیگر کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔

ترجمان نے بتایا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس کے مابین بھتہ خوری کا کھیل مسلسل جاری ہے اور اسی وجہ سے دہلی میں بی جے پی ہیڈکوارٹر ایک فائیو اسٹار ہوٹل کی طرح ہے۔ دنیا میں کسی بھی پارٹی کے پاس اتنا بڑا ہیڈ کوارٹر نہیں ہے۔ اسی طرح بی جے پی اور آر ایس ایس سے وابستہ تنظیمیں مختلف اضلاع میں بڑے دفاتر تعمیر کرا رہے ہیں اور یہ تعمیراتی کام بدعنوانی کے بغیر ممکن نہیں ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔