مودی حکومت پرینکا گاندھی کی فیملی کو ’کورونا کے منھ‘ میں ڈھکیلنا چاہتی ہے: اجے ماکن

اجے ماکن کا کہنا ہے کہ پرینکا گاندھی کو صرف اس لیے نشانہ بنایا گیا کیونکہ وہ آل انڈیا کانگریس کی جنرل سکریٹری ہونے کے ناطے اپوزیشن کی مضبوط آواز بن گئی ہیں، اور مضبوط اپوزیشن کا کردار نبھا رہی ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

دہلی کانگریس کے سابق صدر اور سینئر لیڈر اجے ماکن نے مرکز کی مودی حکومت پر پرینکا گاندھی اور ان کی فیملی کے خلاف سازش رچنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ان سے جبراً گھر خالی کر دوسری جگہ شفٹ ہونے کے لیے کہنا دراصل کورونا وبا کے منھ میں دھکیلنے کی ایک کوشش ہے۔ اجے ماکن نے کہا کہ "حکومت کورونا وبا کے اس دور میں زیڈ پلس سیکورٹی والوں میں سے صرف پرینکا گاندھی جی سے جبراً مکان خالی کرا رہی ہے جو اس وبا کے منھ میں دھکیلنے کی سازش ہے۔" ساتھ ہی ماکن نے یہ بھی کہا کہ "اپوزیشن کے اوپر ایسے دباؤ کی سیاست کبھی ثمرآور ثابت نہیں ہوتی۔ قربانی کی تاریخ رکھنے والی کانگریس اور قیادت ایسی سازشوں سے نہیں ڈرتی۔"

دراصل اجے ماکن نے اپنے ٹوئٹر ہینڈل سے ایک ویڈیو شیئر کیا ہے جس میں ایک رپورٹر کے ذریعہ ان سے پرینکا گاندھی کے 35 لودھی اسٹیٹ واقع گھر کو یکم اگست تک خالی کرنے کے حکم سے متعلق سوال کیا گیا۔ جواب میں اجے ماکن نے کہا کہ "بڑے دکھ کی بات ہے کہ پوری دنیا میں کورونا وبا پھیلی ہوئی ہے۔ حکومت خود اشتہار کر رہی ہے کہ جب تک بہت زیادہ ضروری نہ ہو آپ گھر سے باہر نہ نکلیں۔ ایسے میں گھر شفٹ کرنا خطرے سے خالی نہیں۔ گھر خالی کرنا صرف دو لوگوں کو یا چار لوگوں اور بچوں کو گھر سے لے کر دوسری جگہ جانا نہیں ہوتا۔ اس پورے عمل میں کئی لوگ شامل ہوتے ہیں، گھر کا سامان شفٹ کرنا ہوتا، نئے گھر میں سامان سیٹ کرنا ہوتا ہے۔"

اجے ماکن ویڈیو میں مودی حکومت پر سوال کھڑا کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ"کیا یہ حکومت جان بوجھ کر پرینکا گاندھی جی کو کورونا وبا میں دھکیل رہی ہے؟ اور بہت سارے لوگ ہیں دہلی میں اور ہندوستان میں جن کو زیڈ پلس سیکورٹی ملی ہوئی ہے، کیا سبھی سے گھر خالی کرایا جا رہا ہے؟" وہ مزید کہتے ہیں کہ "پرینکا گاندھی کو صرف اس لیے ہدف بنایا گیا ہے کیونکہ وہ آل انڈیا کانگریس کی جنرل سکریٹری ہونے کے ناطے اپوزیشن کی مضبوط آواز بن گئی ہیں، اور مضبوط اپوزیشن کا کردار نبھا رہی ہیں۔"

ساتھ ہی اجے ماکن مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے پوچھتے ہیں کہ "کیا جمہوریت کے اندر جو بھی مضبوط اپوزیشن کا کردار نبھائے گا اس سے سزا کے طور پر مکان خالی کرایا جائے گا، جب کہ دیگر زیڈ پلس سیکورٹی والوں سے گھر خالی نہیں کرایا جا رہا۔ ان کو (پرینکا گاندھی) اکیلے کیوں ٹارگیٹ کیا جا رہا ہے؟ کیوں زبردستی ان کی فیملی کو کورونا وبا میں دھکیلنے کی کوشش ہو رہی ہے؟ صرف اس لیے کہ وہ اپوزیشن کی آواز بن کر ابھر رہی ہیں؟ کیا حکومت یہ پیغام دینا چاہتی ہے کہ جو بھی اپوزیشن کا کردار نبھائے گا حکومت اس کو تنگ کرے گی، اس پر ظلم کرے گی؟"

ویڈیو کے آخر میں اجے ماکن واضح لفظوں میں کہتے ہیں کہ "مرکزی حکومت اگر یہ سوچتی ہے کہ اس (ظلم) سے ہمارے لیڈر دب جائیں گے، ڈر جائیں گے، پیچھے ہٹ جائیں گے، آواز اٹھانا بند کر دیں گے، تو ان سے کانگریس پارٹی کہنا چاہتی ہے کہ اس ظالمانہ کارروائی سے کانگریس ڈرنے والی نہیں ہے بلکہ اور مضبوطی کے ساتھ ذمہ داری نبھانے کے لیے آگے بڑھے گی۔"

next