مہاراشٹر: اجیت پوار گروپ کو ’این سی پی‘ نام اور ’گھڑی‘ انتخابی نشان دیے جانے کے خلاف شرد پوار پہنچے سپریم کورٹ

الیکشن کمیشن کے ذریعہ اجیت پوار گروپ کو حقیقی این سی پی قرار دیے جانے اور پارٹی کا انتخابی نشان بھی انھیں دینے کے فیصلہ کو چیلنج کرتے ہوئے شرد پوار گروپ نے آج سپریم کورٹ میں عرضی داخل کر دی۔

<div class="paragraphs"><p>شرد پوار اور اجیت پوار</p></div>

شرد پوار اور اجیت پوار

user

قومی آوازبیورو

شرد پوار نے انتخابی کمیشن کے ذریعہ اجیت پوار گروپ کو حقیقی این سی پی مانے جانے کے خلاف سپریم کورٹ کا رخ کر لیا ہے۔ انتخابی کمیشن کی طرف سے این سی پی (نیشنلسٹ کانگریس پارٹی) کا نام اور انتخابی نشان ’گھڑی‘ اجیت پوار گروپ کو دیے جانے پر شرد پوار گروپ نے سپریم کورٹ میں عرضی داخل کی ہے اور الیکشن کمیشن کے فیصلے کو چیلنج کرتے ہوئے عرضی پر جلد سماعت کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

شرد پوار نے یہ عرضی ایڈووکیٹ ابھشیک جیبراج کے ذریعہ پیر کی شام کو اپنی ذاتی حیثیت سے داخل کی ہے۔ یہاں غور کرنے والی بات یہ ہے کہ اجیت پوار گروپ اس سے قبل ہی سپریم کورٹ میں کیویٹ داخل کر چکا ہے۔ ان کی طرف سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ اپوزیشن کی طرف سے اس معاملے میں داخل کسی بھی عرضی پر سماعت ہو تو ان کا بات بھی سنی جائے۔


قابل ذکر ہے کہ این سی پی کے دو گروپ بننے کے بعد تقریباً چھ ماہ سے پارٹی پر حق کو لے کر انتخابی کمیشن میں سماعت چلی۔ 10 سے زیادہ سماعتوں کے بعد انتخابی کمیشن نے این سی پی میں تنازعہ کا نمٹارا کیا اور اجیت پوار کی قیادت والے گروپ کے حق میں فیصلہ سنایا تھا۔ اب این سی پی کا نام اور انتخابی نشان ’گھڑی‘ اجیت پوار کے پاس ہے۔ اس فیصلے پر شرد پوار گروپ نے سخت ناراضگی ظاہر کی تھی۔ اتنا ہی نہیں، شیوسینا (یو بی ٹی) اور کانگریس نے بھی انتخابی کمیشن کے اس فیصلے کی مخالفت کی تھی اور عدالت جانے کی بات کہی تھی۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;