تلنگانہ میں لاک ڈاؤن مکمل ختم، بازاروں میں لوٹی پہلے جیسی رونق

تاجروں کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کے خاتمہ سے ان کی براداری کے افراد کی فکرمندی دور ہوگئی ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ لاک ڈاؤن کے مکمل خاتمہ کے بعد گاہک ایک مرتبہ پھر ان کی دکانات کا رخ کریں گے۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

حیدرآباد: تلنگانہ میں آج سے لاک ڈاؤن کا پوری طرح خاتمہ کر دیا گیا ہے، جس کے سبب ایک طرف جہاں شہریوں میں مسرت کی لہر دیکھی جا رہی ہے، وہیں دوسری طرف تاجروں اور چھوٹے کاروبار کرنے والوں میں جو گزشتہ تقریباً ایک ماہ سے کاروبار کے مناسب طور پر نہ ہونے کی وجہ سے پریشانی اور تشویش کی صورتحال کا سامنا کر رہے تھے، میں کاروبار کے تعلق سے نئی امید جاگی ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کے مکمل طور پر خاتمہ سے ان کے تجارتی و کاروباری اداروں میں گاہکوں کی آمد کی توقع ہے۔ انہوں نے لاک ڈاؤن سے پہلے کی صورتحال پر مسرت کا اظہار کیا ہے۔عوام جو تقریباً ایک ماہ سے گھروں میں محدود تھے وہ بھی گھروں سے باہر نکلنے میں پُرجوش نظر آئے۔ بازاروں میں پہلے جیسی رونق، سرگرمیاں اور گہما گہمی نظر آئی، تاہم بازاروں میں کووڈ کے پروٹوکول پر عمل کیا جا رہا ہے۔ شہریوں نے اس احساس کا اظہار کیا کہ انہوں نے کووڈ کی دوسری لہر کے دوران اپنوں کو کھو دیا اور یہ لہر پہلی لہر کے مقابلہ کافی خوفزدہ کرنے والی تھی۔ انہوں نے صورتحال کے معمول پر آنے اور کورونا کے معاملات میں کمی پر مسرت کا اظہار کیا، تاہم بعض شہریوں نے تیسری لہر کے امکان پر تشویش کا اظہار کیا۔


ریاستی دارالحکومت حیدرآباد اور اضلاع کی ہوٹلس، ٹفن سنٹرس اور کھانے پینے کی اشیا کے مراکز ایک مرتبہ پھر کھل گئے ہیں جہاں پہلے جیسی صورتحال نظر آرہی ہے۔ آج ان مقامات پر لاک ڈاؤن کے خاتمہ کے پہلے دن گاہکوں کی بڑی تعداد نظر آئی۔ کورونا کی وجہ سے ہوٹلوں کا کاروبار کافی محدود ہوگیا تھا۔ ہوٹلوں میں گاہکوں کی سلامتی اور تحفظ کے اقدامات کیے گئے اور ان کو جراثیم سے پاک بنایا گیا۔ کئی ہوٹلس محدود اسٹاف کے ساتھ دوبارہ کھل گئے۔ ہوٹلوں کے مالکین نے کہا کہ جلد ہی مکمل اسٹاف کے ساتھ یہ ہوٹل کام کریں گے۔

تاجروں کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کے خاتمہ سے ان کی براداری کے افراد کی فکرمندی دور ہوگئی ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ لاک ڈاؤن کے مکمل خاتمہ کے بعد گاہک ایک مرتبہ پھر ان کی دکانات کا رخ کریں گے اور ان کے ساتھ تعاون کریں گے۔ لاک ڈاؤن کی وجہ سے ہزاروں چھوٹے موٹے کاروبار کرنے والے اور ٹھیلہ بنڈی پر کاروبار کرنے والے متاثر ہوئے تھے۔ انہوں نے بھی لاک ڈاؤن کے خاتمہ کے لئے حکومت کے قدم کی ستائش کی ہے۔ یومیہ مزدوری کرنے والے افراد نے بھی اس فیصلہ کی ستائش کی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔