شیوراج حکومت کی تعلیمی پالیسیوں کے خلاف این ایس یو آئی کا مظاہرہ، پولیس کا لاٹھی چارج

این ایس یو آئی کارکنان وزیر اعلیٰ کی رہائش کا گھیراؤ کرنے پہنچے تھے جہاں پولیس اور کارکنان کے درمیان تصادم ہو گیا، کارکنان کو وہاں سے واپس بھیجنے کے لیے پولیس نے لاٹھی چارج کا استعمال کیا۔

تصویر ٹوئٹر @NSUI
تصویر ٹوئٹر @NSUI
user

قومی آوازبیورو

مدھیہ پردیش کی شیوراج حکومت کی تعلیمی پالیسیوں کے خلاف این ایس یو آئی نے محاذ کھول دیا ہے۔ این ایس یو آئی کارکنان وزیر اعلیٰ کی رہائش کا گھیراؤ کرنے پہنچے تھے جہاں پولیس اور کارکنان کے درمیان تصادم ہو گیا۔ بعد ازاں پولیس نے کارکنان پر لاٹھی چارج کیا۔

واضح رہے کہ این ایس یو آئی کارکنان پہلے وزیر اعلیٰ کی رہائش کی طرف جانے والی سڑک پر پہنچے جہاں پولیس نے پہلے سے بیریکیڈنگ لگائی ہوئی تھی۔ احتجاج کرنے پر پولیس نے این ایس یو آئی کارکنان پر خوب لاٹھی چارج کیا۔ اس مظاہرہ میں این ایس یو آئی کے قومی صدر نیرج کندن، ریاستی صدر منجل ترپاٹھی بھی موجود رہے۔ پولیس فورس نے انھیں بیریکیڈس لگاتے ہوئے ریڈکراس چوراہے پر روکا۔ اس دوران کارکنان کی پولیس کے ساتھ تصادم کا معاملہ سامنے آیا۔


اس سے قبل این ایس یو آئی کارکنان کو خطاب کرتے ہوئے کمل ناتھ نے کہا تھا کہ صرف جھنڈے، بینر، پوسٹر اور نعرے لگانے سے کچھ نہیں ہونے والا ہے۔ اپنی اس توانائی کو کانگریس تنظیم کو مضبوط کرنے میں لگائیں۔ آپ ریاست کا مستقبل ہیں۔ ہر کالج میں این ایس یو آئی کی یونٹ ہونی چاہیے۔ آپ کا اگر یہ جوش برقرار رہتا ہے تو دو سال بعد مدھیہ پردیش میں کانگریس کا جھنڈا لہرانے سے کوئی نہیں روک سکتا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔