دیہی علاقوں میں دوا، آکسیجن اور علاج کی کمی سے عوام کی زندگی خطرے میں: اکھلیش

اکھلیش یادو نے سوشل میڈیا میں وائرل ویڈیو کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ’’گورکھپور کے اسپتالوں کی حالت قابل رحم ہے۔ اسٹریچر کی کمی میں ایک بھائی اپنے کورونا متاثر بھائی کو کندھوں پر لے جانے پر مجبور ہے۔‘‘

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

لکھنؤ: سماجوادی پارٹی (ایس پی) کے صدر اکھیلیش یادو نے منگل کے روز کہا کہ کورونا سے متاثر دیہی علاقوں میں دوا، آکسیجن اور علاج کی کمی کی وجہ سے عوام کی زندگی خطرے میں ہے۔ اکھلیش یادو نے ٹوئٹ کیا، ’کورونا نے جس طرح اتر پردیش کے گاؤں کو متاثر کیا ہے‘ وہ بے حد تشویشناک ہے۔ گاؤں اور قصبوں میں دوا، آکسیجن اور علاج کی کمی سے عوام کی زندگی خطرے میں ہے اور بی جے پی حکومت ابھی بھی صورتحال کی ہولناکی قبول نہیں کر رہی ہے۔ بی جے پی حکومت کے جھوٹ سے موت کا سچ نہیں چھپایا جا سکتا‘۔

ایک دیگر ٹوئٹ میں اکھلیش یادو نے سوشل میڈیا میں وائرل ایک ویڈیو کا حوالہ دیتے ہوئے کہا، ’گورکھپور کے اسپتالوں کی صورتحال بہت قابل رحم ہے۔ اسٹریچر کی کمی میں ایک بھائی اپنے کورونا متاثر بھائی کو کندھوں پر لے جانے پر مجبور ہے۔ اپنی ناکامی کا جھوٹا ڈھنڈورا پیٹنے میں سرگرم بی جے پی حکومت عوام کا سہارا بننے کے بجائے بوجھ بن گئی ہے‘۔


غور طلب ہے کہ ڈبلیو ایچ او نے پیر کی رات دیہی علاقوں میں کورونا کو کنٹرول کرنے کے لیے یوگی حکومت کی تعریف کی تھی جبکہ منگل کے روز وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے بھی کورونا پر کنٹرول کے لیے یوپی حکومت کے کام کو شاندار بتایا تھا۔ وہیں ایس پی صدر ریاست میں بالخصوص دیہی علاقوں میں کورونا وائرس کو بڑھانے کا الزام حکومت پر عائد کرتے رہے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔