مغربی بنگال: جنازہ لے جا رہی گاڑی حادثہ کا شکار، 18 افراد ہلاک، کئی زخمی

ایک سینئر پولیس افسر نے بتایا کہ ایک گاڑی کم از کم 30 مسافروں کو لے کر نبدیپ کی طرف جا رہی تھی کہ وہ بے قابو ہو گئی اور سڑک کے کنارے کھڑے ایک ٹرک سے ٹکرا گئی۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

کولکاتا: مغربی بنگال کے ندیا ضلع میں اتوار کے روز ریاستی شاہراہ پر ایک بڑے حادثے میں کم از کم 18 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ پولیس کے مطابق یہ واقعہ علی الصبح 3 بجے کے قریب اس وقت پیش آیا جب مسافروں سے بھری ایک میٹاڈور جنازے کو لے کر جا رہی تھی اور بے قابو ہو کر سڑک کے کنارے کھڑے پتھروں سے بھرے ٹرک سے ٹکرا گئی۔

ایک سینئر پولیس افسر نے بتایا کہ "ایک گاڑی کم از کم 30 مسافروں کو لے کر نبدیپ کی طرف جا رہی تھی کہ وہ بے قابو ہو گئی اور سڑک کے کنارے کھڑے ایک ٹرک سے ٹکرا گئی۔ جنازہ شمالی 24 پرگنہ کے بگدا سے لایا جا رہا تھا۔


ایک عہدیدار نے بتایا کہ ’’ابتدائی اطلاعات کے مطابق 11 لوگوں کی موقع پر ہی موت ہو گئی اور 9 دیگر افراد کو شکتی نگر کے ضلع اسپتال لے جایا گیا، جہاں سات دیگر افراد نے زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ دیا۔ دیگر دو لوگوں کو کولکاتا کے این آر ایس میڈیکل کالج اور اسپتال میں منتقل کر دیا گیا، ان کی حالت نازک ہے۔"

مقامی لوگوں نے موقع پر پہنچ کر پولیس کو حادثہ کی اطلاع دی۔ پولیس نے موقع پر پہنچ کر زخمیوں کو اسپتال پہنچایا۔ عہدیدار نے بتایا کہ ’’ہم نے تحقیقات شروع کر دی ہے لیکن یہ یقینی نہیں ہے کہ میٹاڈور کا ڈرائیور زندہ ہے یا نہیں۔‘‘ مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ، ریاست کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی اور گورنر جگدیپ دھنکر نے ہلاکتوں پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔


امت شاہ نے ٹوئٹر پر لکھا، "مغربی بنگال کے ندیا ضلع میں سڑک حادثہ بہت افسوسناک ہے۔ اس حادثے میں جان گنوانے والوں کے اہل خانہ کے ساتھ میری تعزیت۔ خدا انہیں اس تکلیف کو برداشت کرنے کی قوت عطا کرے۔ میں زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لئے دعا گو ہوں۔‘‘

گورنر جگدیپ دھنکر نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ ’’ندیا ضلع میں سڑک کے کنارے کھڑے ٹرک سے گاڑی کے ٹکرانے سے 18 افراد کی موت اور 5 دیگر کے زخمی ہونے کے بارے میں جان کر بہت دکھ ہوا ہے۔ سڑک کی حفاظت کو فروغ دینے کی ضرورت ہے۔" گورنر نے ممتا بنرجی حکومت سے کہا کہ وہ مرنے والوں اور زخمیوں کے اہل خانہ کی مدد کرے۔


وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے ٹوئٹ کیا، ’’ندیا حادثہ کی خبر سن کر دل دہل گیا۔ جان گنوانے والوں کے اہل خانہ سے میری تعزیت اور جو زخمی ہوئے ہیں میں ان کی جلد صحت یابی کے لئے دعا کرتی ہوں۔ مغربی بنگال حکومت متاثرین کو ضروری سہولیات فراہم کرے گی اور تکلیف کے ان لمحات میں حکومت ان کے ساتھ کھڑی ہے۔‘‘

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔