کرناٹک میں 14 دن کا مکمل لاک ڈاؤن، حالات دہلی اور اتر پردیش سے بھی خراب

یدی یورپا حکومت نے شراب کی گھر پر ڈلیوری کی اجازت دیدی ہے جبکہ ان پابندیوں میں ریاست کےاندر یا باہر سفر کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

کورونا کی دوسری لہر میں کرناٹک بی جے پی اقتدار والی پہلی ریاست ہے جس نے ریاست میں مکمل لاک ڈاؤن جیسی پابندیاں لگانے کا اعلان کیا ہے۔ کابینہ کے اجلاس کے بعد وزیر اعلی بی ایس یدی یورپا نے اس کا اعلان کیا۔ کرناٹک کے وزیر اعلی نے کہا کہ کل رات سے اگلے 14 دن کے لئے ریاست میں کرفیو نافذ رہے گا۔

واضح رہے وزیر اعلی یدی یورپا نے ان پابندیوں کااعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ کرناٹک میں دہلی اور اتر پردیش سے بھی زیادہ تیزی سے وبا پھیل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سنگین صورتحال کو دیکھتے ہوئے یہ فیصلہ لیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ان 14 دنوں کے دوران صبح 6 بجے سے 10 بجے کے درمیان لوگ ضروری سامان خرید سکتے ہیں اور دس بجے کے بعد دکانیں بند کر دی جائیں گی اور اس دوران پبلک ٹرانسپورٹ بھی بند رہے گا۔


واضح رہے بی جے پی اقتدار والی ریاستوں میں ایسی پابندیاں عائد نہیں ہیں جبکہ مہاراشٹر، راجستھان اور دہلی میں اس طرح کی پابندیاں عائد ہیں۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنے آخری قوم سے خطاب میں کہا تھا کہ لاک ڈاؤن کو آخری متبادل کے طور پر استعمال کرنا چاہیے اور یہی وجہ ہے کہ بی جے پی اقتدار والی ریاستیں اس طرح کی پابندیاں عائد کرنے سے گریز کر رہی ہیں۔

اپنے فیصلہ میں یدی یورپا حکومت نے شراب کی گھر پرڈلیوری کی اجازت دیدی ہے۔ ان پابندیوں میں ریاست کےاندر یا باہر سفر کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ انتہائی ضروری حالات میں ایسی اجازت دی جائے گی۔ وزیر اعلی نے بتایا کہ طبی اور ضروری خدمات، مینوفیکچرنگ، تعمیراتی اور زرعی شعبوں میں کام کی اجازت ہوگی۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔