بغیر پائلٹ طیارہ ڈیولپمنٹ سے متعلق ہند-امریکہ کے درمیان معاہدہ

ڈی ٹی ٹی آئی گروپ کے اجلاس عام طور پر سال میں دو بار دونوں ممالک میں باری باری ہوتے ہیں۔ کووڈ وبا کی وجہ سے یہ میٹنگ گزشتہ دو بار سے ورچول ذریعے سے منعقد کی جا رہی ہے۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

نئی دہلی: ہندوستان اور امریکہ نے ڈیفنس ٹیکنالوجی اینڈ ٹریڈ انیشیٹو (ڈی ٹی ٹی آئی) کے تحت پہلے پروجیکٹ پر دستخط کیے ہیں جس میں دونوں نے بغیر پائلٹ طیارہ تیار کرنے پر اتفاق کیا ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان منگل کو ورچول ڈی ٹی ٹی آئی کی 11ویں میٹنگ کے دوران معاہدے پر دستخط کیے گئے۔ اس معاہدے کو دونوں ممالک کے درمیان دفاعی شعبے میں تعاون کی سمت میں ایک بڑی کامیابی قرار دیا جا رہا ہے۔

میٹنگ کی صدارت ہندوستان کی طرف سے ڈیفنس سکریٹری (پروڈکشن) راجکمار اور امریکی طرف سے محکمہ دفاع کے سینئر عہدیدار گریگوری کوزنر نے کی۔ ملاقات کے دوران دونوں اطراف نے دفاعی ٹیکنالوجی کے شعبے میں تعاون بڑھانے کے لیے مذاکراتی عمل کو مزید مضبوط بنانے کے اپنے ارادے کا بھی اعادہ کیا تاکہ ٹھوس پیش رفت حاصل کی جا سکے۔


ڈی ٹی ٹی آئی گروپ کے اجلاس عام طور پر سال میں دو بار دونوں ممالک میں باری باری ہوتے ہیں۔ کووڈ وبا کی وجہ سے یہ میٹنگ گزشتہ دو بار سے ورچول ذریعے سے منعقد کی جا رہی ہے۔ اس گروپ کا مقصد دو طرفہ تجارتی تعلقات پر توجہ مرکوز کرنا اور دفاعی آلات کی مشترکہ پیداوار اور مشترکہ ترقی کے امکانات کو بڑھانا ہے۔ ڈی ٹی ٹی آئی کے تحت زمین، پانی، ہوائی اور طیارہ بردار بحری جہاز کی ٹیکنالوجی پر توجہ مرکوز کرنے والے چار مشترکہ ورکنگ گروپس قائم کیے گئے ہیں جو دونوں فریقوں کے درمیان اتفاق رائے پر مبنی منصوبوں کو فروغ دینے کے لیے ہیں۔ ان گروپوں نے ڈی ٹی ٹی آئی کی میٹنگ میں اپنی سرگرمیوں اور پراجیکٹس وغیرہ سے متعلق تعاون کے بارے میں اطلاعات فراہم کریں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔