ستمبر سے بچوں کو بھی کورونا کا ٹیکہ لگایا جائے گا، ایمس کے سربراہ

ایمس سربراہ ڈاکٹر رندیپ گلیریا نے کہا کہ ہندوستان میں بچوں پر کورونا ویکسین کی آزمائش چل رہی ہے اور امید ہے کہ ایمرجنسی استعمال کی منظوری کے بعد ستمبر سے کورونا ٹیکہ بچوں کے لئے دستیاب ہو جائے گا

ڈاکٹر رندیپ گلیریا، تصویر آئی اے این ایس
ڈاکٹر رندیپ گلیریا، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: ہندوستان میں بچوں کے لئے کورونا ٹیکہ کاری کی مہم ستمبر سے شروع ہو سکتی ہے۔ اس سلسلے میں اشارہ دیتے ہوئے آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (ایمس) کے سربراہ ڈاکٹر رندیپ گلیریا نے کہا کہ بچوں کی ٹیکہ کاری کورونا کی چین کو توڑنے کے لئے ایک اہم قدم ثابت ہو سکتی ہے۔

ڈاکٹر گلیریا نے کہا کہ "میرے خیال میں زائڈس کیڈیلا نے آزمائشیں پوری کر لی ہے اور وہ ہنگامی استعمال کے لئے منظوری کے منتظر ہیں۔ بھارت بائیوٹیک کی کوویکسین کا بچوں پر ٹرائل بھی اگست یا ستمبر تک مکمل ہو سکتا ہے۔ دوسری طرف فائزر کی ویکسین کو امریکی ریگولیٹر سے ہنگامی منظوری حاصل ہو گئی ہے۔ لہذا ہم امید کرتے ہیں کہ ہم ستمبر تک بچوں کو ٹیکہ لگانے کی مہم میں کامیابی حاصل کر لیں گے۔


ہندوستان میں اب تک 42 کروڑ سے زیادہ بالغوں کو کورونا کی کم از کم ایک خوراک دی جا چکی ہے۔ حالانکہ تاحال ملک کی قریب 6 فیصد آبادی کو ہی کورونا کی ویکسین دی جا سکی ہے۔ اس سال کے آخر تک حکومت نے تمام بالغوں کو کورونا ویکسین فراہم کرنے کا ہدف مقرر کیا تھا لیکن اس کے لئے ہر روز تقریباً ایک کروڑ ویکسین کی خوراکیں فراہم کرنا ضروری ہیں۔ جبکہ فی الحال ہر روز 40 سے 50 لاکھ کے درمیان ہی کورونا کی خوراکیں فراہم ہو رہی ہیں۔

حکومت کا مقصد ہے کہ 2021 کے آخر تک 18 سال سے زیادہ عمر کے تمام شہریوں کو کورونا ویکسین کی ایک خوراک دے دی جائے۔ متعدد ممالک نے تیسری لہر کے خطرے کے پیش نظر بچوں کی ویکسین کو منظوری فراہم کر دی ہے، تاہم ہندوستان میں ابھی تک بچوں کے لئے کوئی ویکسین منظور نہیں کی گئی ہے۔ہندوستان کا ٹوکیو میں پہلا میڈل، ویٹ لفٹر میرابائی نے جیتا چاندی کا تمغہ


ایمس کے سربراہ نے کہا کہ ہمیں بچوں کے لئے اپنی ویکسین کی ضرورت ہے۔ یہی وجہ ہے کہ بھارت بائیوٹیک اور زائڈس کیڈیلا کی ویکسین انتہائی اہم ہے۔ فائزر کی ویکسین بھی مددگار ثابت ہو سکتی ہے لیکن آبادی بہت زیادہ ہونے کے سبب ہمیں اپنی ویکسین کی ضرورت ہے۔ اس ضمن میں ہم امید کرتے ہیں کہ ستمبر تک ہمارے ملک میں بچوں کے لئے ایک سے زیادہ ویکسین دستیاب ہو جائیں گی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔