مدھیہ پردیش میں لاکھوں کسانوں کو نااہل بتا کر تھمایا گیا وصولی کا نوٹس، اب دی جا رہی دھمکی: کمل ناتھ

کمل ناتھ کا کہنا ہے کہ پہلے پی ایم کسان سمان ندھی کے نام پر ریاست میں انتخابات کو دیکھتے ہوئے بڑھ چڑھ کر کسانوں کے اکاؤنٹ میں رقم ڈلوائی گئی، اب لاکھوں کسانوں کو رقم واپسی کا نوٹس تھما دیا گیا ہے۔

کمل ناتھ، تصوہر آئی اے این ایس
کمل ناتھ، تصوہر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اعلیٰ اور کانگریس کے ریاستی صدر کمل ناتھ نے بی جے پی حکومت پر کسانوں کو بے عزت کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔ سابق وزیر اعلیٰ کمل ناتھ نے ایک بیان جاری کر کہا ہے کہ پہلے پردھان منتری کسان سمّان ندھی کے نام پر ریاست میں ضمنی انتخابات کو دیکھتے ہوئے بڑھ چڑھ کر کسانوں کے اکاؤنٹ میں پیسے ڈلوائے گئے، اس کی خوب تشہیر کی گئی، خوب سہرا لیا گیا، اور اب ریاست میں لاکھوں کسانوں کو نااہل بتا کر انھیں رقم کی ریکوری اور وصولی کے لیے نوٹس تھما دیا گیا ہے۔ اب انھیں وصولی کے لیے دھمکایا جا رہا ہے، ان کی زمینوں پر قبضہ کی دھمکی دی جا رہی ہے۔ اس طرح کا عمل انجام دے کر بی جے پی حکومت کسانوں کی روزانہ بے عزتی کر رہی ہے۔

کمل ناتھ نے کسانوں کے حق میں آواز اٹھاتے ہوئے کہا کہ قاعدے سے تو اس رقم کی وصولی ان ذمہ دار افسران سے ہونی چاہیے جنھوں نے بغیر جانچ کے نااہل کسانوں کے نام فہرست میں جوڑ دیے، ان کے اکاؤنٹ میں آن لائن رقم منتقل کر دی، لیکن نشانہ صرف کسانوں کو بنایا جا رہا ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ قوانین کے مطابق تو اہل کسانوں کی پہلے جانچ ہو کر فہرست تیار کی جانی چاہیے تھی، اور پھر انھیں اکاؤنٹ میں رقم دی جاتی، لیکن اب ان کے اکاؤنٹ میں رقم ڈال کر جس طرح ان سے جرائم پیشوں کی طرح سلوک کر بی جے پی حکومت ان کی روز بے عزتی کر رہی ہے، وہ پوری طرح نامناسب ہے۔ ان میں سے کئی کسان ایسے ہیں جو اس رقم کا استعمال کر چکے ہیں، جن کے پاس اب واپس دینے کو پیسے نہیں ہیں، اب وہ اپنی زمین و زیور گروی رکھ کر، قرض لے کر یہ رقم ادا کرنے میں لگے ہیں۔


کمل ناتھ نے تذبذب میں پڑے کسانوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان واقعات سے اہل کسان بھی اس رقم کے اکاؤنٹ میں آنے کے باوجود استعمال کرنے سے ڈر رہے ہیں کہ پتہ نہیں کب حکومت انھیں نااہل بتا کر رقم وصولی کا نوٹس تھما دے۔ درحقیقت یہ کسان سمّان ندھی یوجنا ریاست کے لاکھوں کسانوں کے لیے کسان اپمان یوجنا بن چکی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔