حلف برداری کے بعد ممتا بنرجی کا بیان، ’پرتشدد واقعات کو برداشت نہیں کیا جائے گا، سخت کارروائی ہوگی‘

ممتا بنرجی نے کہا ’’میں سبھی سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کرتی ہوں۔ اگر کسی بھی پارٹی کے شخص نے تشدد کیا تو اس کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ میں امن کی حامی ہوں اور ہمیشہ رہوں گی۔‘‘

ممتا بنرجی کی حلف برداری / تصویر ٹوئٹر
ممتا بنرجی کی حلف برداری / تصویر ٹوئٹر
user

قومی آوازبیورو

کولکاتا: مغربی بنگال میں ہونے والے اسمبلی انتخابات میں شاندار جیت حاصل کرنے کے بعد ٹی ایم سی کی سربراہ ممتا بنرجی نے تیسری مرتبہ مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ کے طور پر حلف اٹھایا۔ ریاست کے گورنر جگدیپ دھنکڑ نے انہیں حلف دلوایا، جس کے بعد ممتا بنرجی ایک مرتبہ پھر وزیر اعلیٰ کے عہدے پر فائز ہو گئیں۔

حلف اٹھانے کے فوری بعد ممتا بنرجی نے کہا کہ کورونا کے خلاف جنگ ان کی ترجیحات میں شامل ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے کہا کہ بنگال میں اب تشدد کے واقعات کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا، ’’بنگال کو تشدد پسند نہیں ہے۔ میں ذاتی طور پر نظم و قانون کے مسائل کا جائزہ لوں گی اور یقینی بناؤں گی کہ ریاست میں امن قائم ہو۔


ممتا بنرجی نے مزید کہا ’’میں سبھی سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کرتی ہوں۔ اگر کسی بھی پارٹی کے شخص نے تشدد کیا تو اس کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ میں امن کی حامی ہوں اور ہمیشہ رہوں گی۔‘‘

وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کا مزید کہنا تھا کہ نظم و نسق کی ذمہ داری پچھلے تین ماہ سے الیکشن کمیشن آف انڈیا (ای سی آئی) کے زیر نگرانی تھی۔ کمیشن نے متعدد افسران کو تبدیل کر دیا، جنہیں پھر سے بحال کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ میں نے ابھی حلف لیا ہے اور میں اس بات کو یقینی بناؤں گی کہ امن برقرار رہے۔


واضح رہے کہ مغربی بنگال اسمبلی انتخابات میں زبردست فتح درج کر کے ترنمول کانگریس نے تاریخ رقم کر دی ہے۔ ریاست میں مسلسل تیسری بار ٹی ایم سی اقتدار پر قابض ہوئی ہے۔ مغربی بنگال اسمبلی انتخابات 2021 میں پارٹی نے 292 اسمبلی نشستوں میں سے 213 پر کامیابی حاصل کی ہے، جو اکثریت کے ہدف سے کافی زیادہ ہے۔ وہیں، اس اسمبلی انتخابات میں اپنی پوری طاقت جھونک دینے والی بی جے پی صرف 77 نشستوں پر ہی کامیابی حاصل کر سکی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔