’میں نہیں لڑوں گا کانگریس صدر عہدہ کا انتخاب‘، سونیا گاندھی سے ملاقات کے بعد اشوک گہلوت کی وضاحت

گہلوت نے کہا کہ ’’گزشتہ دنوں کے واقعہ نے ہم سب کو ہلا کر رکھ دیا ہے، میں نے سونیا گاندھی سے راجستھان میں پیدا حالات کے لیے معافی مانگی ہے۔‘‘

اشوک گہلوت، تصویر ٹوئٹر @ashokgehlot51
اشوک گہلوت، تصویر ٹوئٹر @ashokgehlot51
user

قومی آوازبیورو

جمعہ یعنی 30 ستمبر کو کانگریس صدر عہدہ کے لیے نامزدگی کی آخری تاریخ ہے۔ اس سے قبل ایک بڑی خبر سامنے آ رہی ہے کہ اشوک گہلوت نے اس انتخاب میں قسمت آزمائی نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت نے واضح کر دیا ہے کہ وہ کانگریس صدر عہدہ کا انتخاب نہیں لڑیں گے۔ انھوں نے نئی دہلی میں کانگریس صدر سونیا گاندھی سے ملاقات کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’’میں نے ان کے ساتھ میٹنگ میں پوری بات رکھی۔

میڈیا اہلکاروں نے جب اشوک گہلوت سے یہ سوال کیا کہ کیا وہ وزیر اعلیٰ بنے رہیں گے؟ اس پر انھوں نے جواب دیا کہ ’’یہ فیصلہ میں نہیں، کانگریس صدر سونیا گاندھی لیں گی۔‘‘ اپنے ایک بیان میں اشوک گہلوت نے یہ بھی کہا کہ ’’گزشتہ دنوں کے واقعہ نے ہم سب کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ میں نے سونیا گاندھی سے راجستھان میں پیدا حالات کے لیے معافی مانگی ہے۔ میں نے گزشتہ 50 سال تک کانگریس کے لیے وفاداری کے ساتھ کام کیا، میں سونیا گاندھی کی کرم فرمائی کے سبب تیسری بار وزیر اعلیٰ بنا۔‘‘


اس درمیان کانگریس کے سینئر لیڈر دگوجے سنگھ نے پارٹی رکن پارلیمنٹ ششی تھرور سے ملاقات کی ہے۔ ششی تھرور نے اس ملاقات کے بعد کہا کہ ’’میں کانگریس صدر عہدہ کے لیے ان کی امیدواری کا استقبال کرتا ہوں۔ ہم دونوں اس بات پر متفق ہیں کہ ہمارے درمیان ایک دوستانہ مقابلہ رہا۔ ہم بس اتنا چاہتے ہیں کہ جو جیتے گا، کانگریس جیتے گی۔‘‘ دراصل ششی تھرور نے بہت پہلے ہی کانگریس صدر عہدہ کے لیے انتخاب لڑنے کا اعلان کیا ہوا ہے۔ 30 ستمبر کی صبح وہ نامزدگی کا پرچہ داخل کریں گے۔ دگوجے سنگھ کے بھی اس انتخاب میں کھڑے ہونے کی قیاس آرائیاں گزشتہ کچھ دنوں سے ہو رہی ہیں، اور اب جب کہ ششی تھرور نے ان سے دوستانہ مقابلہ کی بات کہی ہے، تو قوی امید ہے 30 ستمبر کو دگ وجے سنگھ بھی پرچہ نامزدگی داخل کریں۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔